سابق وزیراعظم اور وزیر داخلہ کو مراعات اور سیکیورٹی دینے کا نوٹیفیکیشن معطل

سابق وزیراعظم اور وزیر داخلہ کو مراعات اور سیکیورٹی دینے کا نوٹیفیکیشن معطل
 سابق وزیراعظم اور وزیر داخلہ کو مراعات اور سیکیورٹی دینے کا نوٹیفیکیشن معطل

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے سابق وزیراعظم اور وزیر داخلہ کو تاحیات مراعات اور سیکیورٹی دینے کا نوٹیفیکیشن معطل کر دیا ہے۔ عدالت نے سیکرٹری داخلہ کو ریکارڈ سمیت کل ذاتی طور پر پیش ہونے کی ہدایت کر دی ہے۔چیف جسٹس کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ نے سابق وزرائے اعظم اور وزراءداخلہ کو سیکیورٹی دینے سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ کنٹرولر جنرل عاطف عثمان نے بتایا کہ ان کی سیکیورٹی پر سالانہ 29 کروڑ روپے اخراجات آئیں گے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ رحمن ملک عدالت کو بتائیں کہ ان کی زندگی کو کیا خطرات لاحق ہیں اور انہیں کیوں سیکیورٹی چاہیے؟ آرٹیکل 9 کے تحت ریاست کی ذمہ داری ہے کہ وہ عوام کے جان و مال کا تحفظ کرے۔عدالت نے سابق وزیراعظم اور وزرا کو تاحیات مراعات اور سیکیورٹی دینے کا نوٹیفیکیشن معطل کرتے ہوئے قرار دیا کہ بادی النظر میں نوٹیفیکیشن بغیر کسی قانون کے جاری کیا گیا۔

مزید : اسلام آباد