دہلی میں میرا شو میری زندگی کا یادگار شو تھا ‘ عطاءاللہ عیسیٰ خیلوی

دہلی میں میرا شو میری زندگی کا یادگار شو تھا ‘ عطاءاللہ عیسیٰ خیلوی

لاہور ( این این آئی) لیجنڈ گلوکار عطاءاللہ عیسیٰ خیلوی نے کہا ہے کہ بھارت میں مجھے جس قدر پذیرائی ملی وہ میرے خوابوں میں بھی نہیں تھی ، بھارتی شہر دہلی میں میرا شو میری زندگی کا یادگار شو تھا جس کو کبھی فراموش نہیں کر سکتا ، دہلی کے پرانے قلعے میں جہاں تین ہزار افراد کے بیٹھنے کی گنجائش تھی وہاں 8ہزار سے زیادہ لوگوں نے شرکت کر کے مجھ سے اپنی محبت کا اظہار کیا ۔ ” این این آئی“ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے عطاءاللہ عیسیٰ خیلوی نے بتایا کہ بھارتی تنظیم ” آس “ نے خصوصی طور پر بھارت آنے کی دعوت دی تھی جن کی دعوت پر میں نے دہلی کے پرانے قلعے میں پرفارم کر کے وہاں پاکستانی فن کا جھنڈا گاڑ دیا ہے ۔ ہزاروں کی تعداد میں پرستاروں نے میرے شو میں شرکت کر کے مجھے حیران کر دیا ۔

 انہوں نے کہا کہ میرا شو مقررہ وقت سے زیادہ ہونے کے بعد بھی جاری رہا جس پر مقامی پولیس نے پرستاروں کو نکالنے کی کوشش کی مگر پرستاروں نے وہاں سے جانے سے انکار کر دیا ۔ بھارتی پولیس آفیسر نے مجھے سے درخواست کی کہ آپ کسی نہ کسی طرح اپنے شو کو جلدی ختم کر دیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ بھارت میں مجھے جس قدر محبت اور عزت ملی ہے وہ میری سوچ سے بھی زیادہ ہے ۔ اس سے قبل بھی بھارت جا چکا ہوں مگر دہلی میں ہونے والا میرا شو میرے پہلا عوامی شو تھا ۔

لیکن اب فلم کی ہدایتکارہ زویا اختر نے ان خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے اس کردار کے لئے شفالی چھایا کو منتخب کیا ہے جو ایک منجھی ہوئی اداکارہ ہیں اور اس کردار کو بخوبی نبھاسکیں گی۔ فلم کی عکس بندی رواں سال شروع کی جائے گی

مزید : کلچر