پندرہ سال بعد کھانا کھالیا

پندرہ سال بعد کھانا کھالیا
پندرہ سال بعد کھانا کھالیا

  

لندن (نیوز ڈیسک)20سالہ برطانوی لڑکی جس نے پانچ سال کی عمر سے ”چپس“کے علاوہ کچھ نہیں کھایا کو ڈاکٹروں نے بالآخر”ہپنا ٹائز“کرکے کھانا کھلادیا۔ ”ہینا لٹل“کو پانچ سال کی عمر سے بیماری تھی جس کے باعث وہ کھانا نہیں کھا سکتی تھی بلکہ کھانا دیکھ کر اس کی طبیعت خراب ہوجاتی تھی۔کام کے دوران وہ اس وجہ سے اکثر بے ہوش ہو جاتی۔ وہ صرف چپس کھاتے ہوئے نارمل محسوس کرتی تھی کیونکہ اس کے خیال میں یہ بالکل سادہ ہوتے ہیں۔ اس کے مطابق مختلف ذرائقے ملانے کا خیال اسے ڈرا دیتا تھا۔ کبھی کبھار وہ ناشتے میں ایک ٹوسٹ کھانے میں کامیاب ہو جاتی تھی لیکن اس سے زیادہ کچھ نہیں۔ اس کے مطابق اس کے جاننے والے بھی اس کی حالت سمجھنے سے قاصر تھے۔ پھر ماہر نفسیات”فلیکس اکونوماکس“سے رابطہ کیا تو انہوں نے بتایا کہ ایسا لاشعور کے باعث ہو رہا ہے۔ ممکن ہے بچپن میں کوئی ایسا واقعہ پیش آیا ہو جس نے لاشعور پرگہرا اثر ڈالا ہو۔ اس ڈاکٹر نے ایک گھنٹے میں ”ہینا“ کو ہپنا ٹائز“کیا اور اس کے لاشعور میں سے کھانے کا خوف نکال دیا اس کے بعد ہینا نے 15سال بعدپہلی مرتبہ صحیح طریقے سے کھانا کھایا ہے۔ 

مزید : ڈیلی بائیٹس