جی ایس پی پلس کا درجہ ملنے سے برآمدات میں اضافہ ہوگا،حنا پرویز

جی ایس پی پلس کا درجہ ملنے سے برآمدات میں اضافہ ہوگا،حنا پرویز

لاہور(سپیشل رپورٹر) مسلم لیگ(ن) کی ممبر صوبائی اسمبلی و پنجاب ویمن پارلیمنٹری کاکس کی جنرل سیکرٹری حنا پرویز بٹ نے کہا ہے کہ یورپی پارلیمنٹ کی جانب سے پاکستان کو جی ایس پی پلس کا درجہ ملنے سے پاکستان کو ٹیکسٹائل کی 900اور دیگر شعبوں کی1600سے زائد مصنوعات کو یورپ کے 27 ممالک میں بغیر ڈیوٹی برآمد کرنے کی سہولت حاصل ہو گی جس سے نہ صرف ملکی برآمدات میں بے پناہ اضافہ ہو گا بلکہ ملکی معیشت کے استحکام کے ساتھ ساتھ وطن عزیز میں روزگار کے وسیع مواقع پیدا ہونگیخواتین کو ڈومیسٹک سطح پر بے حد مشکلات درپیش ہیں حکومت کو تجویز دی ہے کہ گھریلو ملازمین کیلئے خصوصی طور پر رجسٹریشن کا بندوبست کیاجائے اور ان کی نوکریوں کیلئے وہی معیار رکھا جائے جو دیگر اداروں میں مزدوروں اور دیگر کام کرنے والوں کے لئے مقرر ہے حکومت کا یہ مشن ہے کہ صنعت و تجارت کی ترقی کیلئے خواتین کی ہر ممکن مدد کی جائے۔اور ہر ادارے کو بزنس ویمن سے تعاون کیلئے پابند کیا جائے وہ فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری(ایف پی سی سی آئی) میں بزنس وومن ایمپاور منٹ کے عنوان سے منعقدہ پروگرام میں خطاب کر رہی تھیں سا بق ریجنل چےئر مین فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میاں طارق شفیع‘بسم اللہ بی بی چےئر پرسن بزنس وومن ایمپاور منٹ ایف پی سی سی آئی‘روبی دانیال صدر کرن ویلفےئر فاؤنڈیشن اور دیگر اس موقع پر مو جود تھے حنا پرویز نے کہا کہ جی ایس پی پلس کا درجہ ملنے سے پاکستان کی ساڑھے تین ہزار مصنوعات پر عائد 11فیصد ڈیوٹی صفر ہونے سے پاکستانی برآمدات میں اضافہ ہونے کی وجہ سے سالانہ ایک کھرب روپے کا فائدہ ہو گا،ملکی معیشت میں بہتری پیدا ہو گی، روز گار کے نئے مواقع پیدا ہونگے، کرائم میں کمی واقع ہو گی اور یورپین ممالک کے ساتھ پاکستان کے دو طرفہ تعلقات میں مزید بہتری پیدا ہو گی۔

مزید : میٹروپولیٹن 1