سکیورٹی خدشات، آئی ایم ایف حکام کا پاکستان آنے سے انکار

سکیورٹی خدشات، آئی ایم ایف حکام کا پاکستان آنے سے انکار

 اسلام آباد (اے این این )آئی ایم ایف حکام نے سکیورٹی خدشات کے پیش نظراقتصادی جائزہ مذاکرات کیلئے پاکستان آنے سے انکار کر دیا پاکستانی معیشت کا جائزہ لینے کیلئے مذاکرات 30 اپریل سے دوبئی میں ہونگے ، وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف سے قرض کی اگلی قسط حاصل کرنے کیلئے اقتصادی جائزہ مذاکرات 30 اپریل سے سات مئی تک دوبئی میں ہونگے۔ آئی ایم ایف حکام نے سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر پاکستان آنے سے معذرت کر لی ہے۔ مذاکرات میں پاکستان کی تیسری سہہ ماہی کی اقتصادی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا۔ آئی ایم ایف کے وفد کی قیادت مشن کے سربراہ جعفری فرینک کریں گے جبکہ پالیسی لیول مذاکرات میں اسحاق ڈار پاکستانی وفد کی قیادت کریں گے۔ آئی ایم ایف کو جنوری سے مارچ تک کے اقتصادی اعدادوشمار پیش کئے جائیں گے۔ مذاکرات کے بعد آئی ایم ایف کا ایگزیکٹو بورڈ قرض کی اگلی قسط کی منظوری دے گا۔ واضح رہے آئی ایم ایف نے گزشتہ سال ستمبر میں پاکستان کیلئے 6.7 ارب ڈالر قرض منظور کیا تھا۔ پاکستان کو اب تک تین اقساط موصول ہو چکی ہیں۔

 

مزید : صفحہ اول