اسلام آباد ہائی کورٹ کی کچی آبادی کیلئے حکمت عملی تیار کرنے کی ہدایت

اسلام آباد ہائی کورٹ کی کچی آبادی کیلئے حکمت عملی تیار کرنے کی ہدایت
اسلام آباد ہائی کورٹ کی کچی آبادی کیلئے حکمت عملی تیار کرنے کی ہدایت

  

اسلام آباد (آئی این پی)اسلام آباد ہائیکورٹ نے سیکرٹری داخلہ کو وفاقی دارالحکومت میں قائم غیرقانونی کچی آبادیوں سے متعلق حکمت عملی تیارکرنے کی ہدایت کردی ہے۔بدھ کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے غیرقانونی کچی آبادیوں سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ سیکرٹری داخلہ، چیئرمین سی ڈی اے اور چیف کمشنر اسلام آباد عدالت میں پیش ہوئے۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے استفسار کیا کہ سی ڈی اے بتائے کہ غیرقانونی کچی آبادیاں کیسے قائم ہوئیں۔ ان کو پانی،گیس اور بجلی کیسے فراہم کی جارہی ہے۔سیکریٹری داخلہ ڈاکٹر شاہد نے بتایا کہ اسلام آباد میں 14غیر قانونی کچی آبادیاں ہیں، ایک کچی آبادی کا خاتمہ کردیا ہے باقی کچی آبادیوں کے خاتمے کیلئے جلد کارروائی کریں گے۔ جسٹس شوکت عزیز صدیقی کا کہنا تھا کہ کچی آبادیوں کے قائم ہونے میں سیاسی اور انتظامی عوامل کارفرما ہیں۔عدالت نے متعلقہ حکام کو غیرقانونی کچی آبادیوں کے بارے میں سیکرٹری داخلہ کے ساتھ مل کر حکمت عملی تیار کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 23اپریل تک ملتوی کردی

مزید : رئیل سٹیٹ