جانور کھیت میں داخل ہونے پربااثر چوہدریوںکے ہاتھوں مزارع قتلعلی

جانور کھیت میں داخل ہونے پربااثر چوہدریوںکے ہاتھوں مزارع قتلعلی

پور چٹھہ(نمائندہ پاکستان)علی پور چٹھہ کے نواحی گاﺅں رکھ کلاں میں جانور کھیت میں داخل ہونے پر بہیمانہ قتل،بااثر چوہدریوں نے غریب مزارع کی زندگی کا چراغ گل کر دیا،مقدمہ درج۔ تفصیلات کے مطابق علی پور چٹھہ کے نواحی گاﺅں رکھ کلاں میں 30سالہ مزارع محمد منشاءگزشتہ 15سالوںسے مقامی زمینداروں محمد اسلم ولد حسن محمد جٹ کے ہاں ملازم تھا اور مویشی چراتا تھا۔گزشتہ روز مذکورہ ملازم مویشی لے کر محمد عارف چٹھہ کی فصل میں داخل ہو گیا جس پر اسے گالی گلوچ اور مار پیٹ کے بعد سنگین نتائج کی دھمکیاں دی گئیں۔مزارع محمد منشاءکھیتوں سے مویشی لے کر آرہا تھا کہ دریائے چناب کے بند کے نزدیک بیلہ کے علاقہ میں زمیندار محمد عارف چٹھہ اپنے دیگر ساتھیوں کے ہمراہ مسلح آتشین اسلحہ موجود تھا۔اس نے للکارا مارا کہ ہمارے کھیتوں میں مویشی چرانے کا انجام دیکھ لو اور محنت کش کو اغواءکر لیا اور بعدازاں پے در پے فائر کر کے موت کے گھاٹ اتار دیا۔پولیس تھانہ علی پور چٹھہ نے مقدمہ درج کر لیا ہے اور ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے مار رہی ہے۔

مزید : علاقائی