شاعر اورادیب حبیب جالب کی بیٹیاں دربدرکی ٹھوکریں کھانے پر مجبور

شاعر اورادیب حبیب جالب کی بیٹیاں دربدرکی ٹھوکریں کھانے پر مجبور
شاعر اورادیب حبیب جالب کی بیٹیاں دربدرکی ٹھوکریں کھانے پر مجبور

  

فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) نامور انقلابی شاعر وادیب حبیب جالب کی دو بیٹیاں گھریلو ناچاقی اور قتل کی دھمکیاں ملنے کے باعث اپنا آبائی گھر چھوڑ کر دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہوگئی ہیں۔ رخشندہ جالب اور حجاب جالب نے میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ حکومت انہیں تحفظ فراہم کرے اور وراثت میں انہیں حصہ دلایا جائے تاکہ انہیں گھر کی چھت میسر آسکے، حبیب جالب کے حوالے سے تمام حکومتی امداد اہل خانہ کے استعمال کے آنے کے بجائے صرف طاہرہ جالب اور سائرہ حسن استعمال کررہی ہیں جبکہ ایک نفسیاتی مریضہ بہن بھی اُنہی کے قبضے میں ہے۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ حبیب جالب کی بیگم ممتاز جالب اور بیٹی جمیلہ نور افشاں کی موت کی ذمہ دار بھی سائرہ حسن ہے۔ انہوں نے ارباب اختیار سے مطالبہ کیا کہ حبیب جالب کے خاندان کی کفالت اور دیگر مراعات کسی ایک بیٹی کو دینے کے بجائے دیگر اہل خانہ کو بھی مد نظر رکھا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ان کے بھائی یاسر جالب سعودی عرب میں مقیم ہیں جن کی غیر موجودگی میں ان کے ساتھ ان کی بہن کی جانب سے ظالمانہ سلوک کیا گیا۔

مزید : قومی