ایم کیوایم کا کارکنوں کے ماورائے عدالت قتل اور گرفتاریوں کے خلاف احتجاج

ایم کیوایم کا کارکنوں کے ماورائے عدالت قتل اور گرفتاریوں کے خلاف احتجاج
ایم کیوایم کا کارکنوں کے ماورائے عدالت قتل اور گرفتاریوں کے خلاف احتجاج

  

کراچی(نیوز ڈیسک)ایم کیوایم نے کارکنوں کے ماورائے عدالت قتل اور گرفتاریوں کے خلاف کراچی پریس کلب کے سامنے احتجاج کیا ۔ مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ  لاپتہ کارکنوں کو بازیاب کرایا جائے ۔ تمام کارکنوں کی بازیابی تک مظاہرے جاری رہیں گے۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے خواجہ اظہار الحسن نے کہا کہ ہمارے کارکنوں اور ہمدردوں کو سادہ کپڑوں میں ملبوس اہلکاربغیر نمبر پلیٹ والی گاڑیوں میں اٹھاکر لے جاتے ہیں اور پھر ان کی لاشیں ملتی ہیں ۔ تمام جمہوری ادارو ں کے دروازے پر دستک دی لیکن کسی نے ایک نہ سنی ،خواجہ اظہار الحسن نے اعلان کیا کہ آخری کارکن کی بازیابی تک ہم آواز بلند کرتے رہیں گے ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ہمارے لاپتہ کارکنوں کو عدالت میں پیش کیا جائے،ہم ملک میں قانون کی حکمرانی چاہتے ہیں ، ہم نے خود مطالبہ کیا تھا کہ شہر قائد میں جرائم پیشہ عناصر کیخلاف کارروائی کی جائے لیکن کراچی آپریشن کا رخ ایم کیو ایم کی طرف موڑ دیا گیا ہے۔حیدر عباس رضوی نے کہا ہمارا جرم یہ ہے کہ ہم حق پرست ہیں ،کارکنوں پر تشدد کرنے والے یاد رکھیں کہ اللہ کی لاٹھی بے آواز ہے ۔حیدر عباس رضوی نے کہا کہ میں وزیر اعظم سے ہاتھ جوڑکر کہتاہوں کہ تحفظ پاکستان آرڈیننس واپس لیں ۔ یاد رہے کہ متحدہ قومی موومنٹ جمعے کو کارکنوں کی گرفتاریوں اور ماروائے عدالت قتل کیخلاف ملک بھر میں احتجاج کر رہی ہے ۔

مزید : کراچی