پاکستانی عازمین حج کیلئے سعودی کمپنیز سے کھانا خرید نا لازمی قرار ،،وزارت مذہبی امور کی سعودی عرب سے پابندی واپس لینے کی درخواست

پاکستانی عازمین حج کیلئے سعودی کمپنیز سے کھانا خرید نا لازمی قرار ،،وزارت ...
پاکستانی عازمین حج کیلئے سعودی کمپنیز سے کھانا خرید نا لازمی قرار ،،وزارت مذہبی امور کی سعودی عرب سے پابندی واپس لینے کی درخواست

  

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)سعود ی وزارت حج نے اس بار پاکستانی عازمین پر پابندی لگادی کہ وہ سعودی کمپنیز سے کھانا خریدیں گے ۔ تفصیلات کے مطابق سعودی کمپنیز عازمین حج کو وقوف عرفہ اور مزدلفہ میں 6روز کھانا فراہم کریں گی جس کے پیسے حجاج کرام سے پہلے وصول کر لئے جائیں گے یعنی کہ کھانا کھاو یا نہ کھاو بل تو ضرور ادا کر نا پڑے گا اور وہ بھی وقت سے پہلے ۔تاہم وزارت مذہبی امور نے سعود ی حکام سے درخواست کی ہے کہ وہ یہ پابندی واپس لے لیں ۔ وزیر مذہبی امور سردار یوسف کی جانب سے دی جانے والی درخواست میں کہا گیا کہ پاکستانی مخصوص قسم کا کھانا کھانے کے عادی ہیں ۔ یعنی جب تک کھانے میں 12مصالحے اور ادرک کا پڑکا نا ہو تو بھلا پاکستانی وہ کھانا کیسے پسند کریں گے ۔  چٹ پٹے کھانے کے عادی عربیوں کا پھیکا اور بغیر مرچ والا کھانا نہیں کھا سکتے ۔ وزارت مذہبی امو رکی درخواست میں یہ بھی موقف اختیار کیا گیا ہے کہ اس اقدام سے پاکستانی عازمین پر مزید اضافی بوجھ بھی پڑے گا ۔لہذا پاکستانی عازمین کیلئے سعود ی کمپنیز سے کھانا خریدنے کی پابندی نہ لگائی جائے تاکہ عازمین اپنی عبادات کے دوران وقت ، بھوک اور جیب کے لحاظ سے جب چاہیں جو چاہیں کھا سکیں ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں