بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ کیلئے ون ونڈو سسٹم متعارف کروایا جائے،،عامر عبدالقدیر

بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ کیلئے ون ونڈو سسٹم متعارف کروایا جائے،،عامر ...

لاہور (جنرل رپورٹر)بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ کیلئے ٹیکس سے متعلقہ اداروں کا ون ونڈو سسٹم متعارف کروایا جائے،اور تمام سرکاری اداروں کے علاوہ سٹیک ہولڈرز کے دفاتر میں فرنٹ ڈیسک قائم کیے جائیں،نادرہ شناختی کارڈ جاری کرتے ہوئے ہر شہری کا این ٹی این نمبر بھی جاری کیا جائے، ایف بی آر کو آزاد‘ خود مختار اور شفاف ادارہ بنانا ہوگا، چیئرمین ایف بی آرکی تقرری پارلیمنٹ کی تمام جماعتوں اور سٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے مشروط کی جائے، الیکشن کمیشن اور نیب کی طرح ایف بی آر ایک انتہائی اہم ادارہ ہے اس کی غیر جانبداری یقینی بنانے کیلئے ٹیکس ماہرین ہر فورم پر جدوجہد اور احتجاج کرینگے، سابق سیکرٹری پاکستان ٹیکس بار محمد عامر عبدالقدیر، سابق صدور ٹیکس بار حبیب الرحمن زبیری، محمد اویس، محمد اجمل خان، ماہرین محمد حسن علی قادری، ذوہیب الرحمن، عاشق علی رانا، صدر پاکستان ٹیکس بار محسن ندیم، سینئر نائب صدر راولپنڈی، اسلام آباد ٹیکس بار سید تنصیر بخاری، صدر شیخوپورہ ٹیکس بار خالد متین، جنرل سیکرٹری محمد طاہر، چیئرمین پاکستان ٹیکس فورم ذوالفقار خان، صدر پاکستان ٹیکس ایڈوائزرز ایسوسی ایشن میاں عبدالغفار سمیت دیگر ٹیکس ماہرین نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ اشرافیہ اور بڑے مگرمچھوں کو بھی ٹیکس نیٹ میں شامل کیا جائے، اور ٹیکس گزاروں سے ٹیکس وصولی اہداف کا روائتی سسٹم تبدیل کیا جائے انہوں نے کہا ٹیکس آڈٹ کے تمام منتخب کیسیز میں کوئی بڑا آدمی شامل نہیں عام ٹیکس گزاروں کیخلاف کارروائی کسی صورت برداشت نہیں کی جائیگی، چیئرمین ٹیکس کمیٹی لاہور چیمبر آف کامرس قاری حبیب الرحمن نے کہا کہ تمام سٹیک ہولڈرز ایف بی آر کے صوابدیدی اختیارات خاتمے اور آڈٹ کے آسان اور منصفانہ طریقے کیلئے مشترکہ جدوجہد اور احتجاج پر متفق ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1