نوجوان پاکستان کا روشن مستقبل ہیں ، بزدل حکمران خود توڈرتے ہیں قوم کو بھی ڈراتے ہیں : سراج الحق

نوجوان پاکستان کا روشن مستقبل ہیں ، بزدل حکمران خود توڈرتے ہیں قوم کو بھی ...

لاہور (اے این این )امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے خطے میں امریکہ اور نیٹو کی موجودگی قیام امن کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے ۔جنگ کے خاتمہ اورقیام امن کیلئے جب بھی اعلیٰ سطحی مذاکرات کا سلسلہ شروع ہوتا ہے امریکہ شرارت کرکے انہیں سبوتاژ کردیتا ہے ۔خطے میں امن کیلئے ضروری ہے کہ افغانستان کو فوری طور پر افغانوں کے حوالے کرکے نیٹو فورسز خطے سے نکل جائیں ۔نوجوان پاکستان کا روشن مستقبل ہیں لیکن حکمرانوں نے لوٹ مار اور کرپشن سے قوم کا مستقبل تباہ کرنے سمیت آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک کے قرضوں کی ہتھکڑیاں قوم کے ہاتھوں میں پہنا دی ہیں ۔گزشتہ روز موٹروے چوک پشاور میں یوتھ کے صوبائی کنونشن سے خطاب میں انکا مزید کہناتھا پاکستان کا مستقبل کیا ہوگا اس سوال کا ایک ہی جواب ہے مستقبل نوجوانوں کے ہاتھوں میں دے دو ۔ ملک کے تمام مسائل تب حل ہوں جب ملک کا اقتدار نوجوان سنبھالیں گے ہم اقتدار نوجوانوں کو دیں گے۔18ء کے انتخابات میں نوجوان ہمارا ساتھ دیں ہم ان کو خوشحال پاکستان دیں گے۔ہم ایسا پاکستان دینگے جس میں روشنی ہوگی ۔ہرنوجوان کو روزگار ملے گا۔ ملک وسائل سے نہیں صلاحیتوں سے ترقی کرتے ہیں اور پاکستان کے نوجوانوں میں ذہایت و صلاحیت ہے۔ بزدل حکمران خود بھی ڈرتے ہیں اور قوم کو بھی ڈراتے ہیں ، ا نھو ں نے عافیہ صدیقی کو بیچا ،ایمل کانسی کو فروخت کیا ۔یوسف رمزی کا سودا کیا یہ ضمیر فروش ہیں۔ قوم کے وسائل کو بیرون ملک منتقل کیا ۔ نوجوان جھکتے نہیں وہ تو جھکاتے ہیں۔ ملک میں دہشت گردی مشرف اور انکے بعد کے ادوار کا تحفہ ہے۔امریکی وزیر دفاع کے ایک ٹیلی فون پر اپنے آپ کو کمانڈو کہنے والا جنرل فوراً جھک گیا تھا جس کا خمیازہ قوم ابھی تک بھگت رہی ہے۔امریکہ کا افغانستان پر ہزاروں ٹن وزنی بم گرانادراصل اسلام آباد پر حملہ ہے،لیکن ہمارے حکمرانوں کی خاموشی سوالیہ نشان ہے، انکی خارجہ اور معاشی پالیسیاں ناکام ہیں ۔ قبائلی علاقوں کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنا وہاں کے عوام کا مطالہ ہے۔حکومت نے محض اعلان کرکے خا موشی اختیار کرلی ہے یہ اسکی غلط فہمی ہے کہ قبائل اور ہم اس پر خاموش رہیں گے ایف سی آر کی لعنت سے قبائل کو چھٹکارا دلا کر رہیں گے۔لوڈ شیڈنگ ختم کرنا موجودہ حکمرانوں کے بس کی بات نہیں انھوں نے کہا تھاکہ اگر تین ماہ میں لوڈشیڈنگ ختم نہ ہوئی تو نام بدل دیجئے گا لیکن چار سال ہو گئے ہیں لوڈ شیڈنگ میں اضافہ ہی ہوا ہے۔سب سے بڑھ کر ظلم خیبر پختونخوامیں ہو رہا ہے۔بجلی یہاں پیدا ہوتی ہے اور اندھیرایہاں سب سے زیادہ ہے۔ اس موقع پر جماعت اسلامی یوتھ کے ہزاروں نوجوانوں نے امیر جماعت اسلامی سے اسلامی و خوشحال پاکستان کیلئے جدوجہد کرنے کا عہد بھی کیا۔

سراج الحق

مزید : علاقائی