امریکی فوج میں اضافہ کیلئے مک ماسٹر کا دورہ کابل ،افغان حکام سے ملاقاتیں

امریکی فوج میں اضافہ کیلئے مک ماسٹر کا دورہ کابل ،افغان حکام سے ملاقاتیں

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک )امریکہ کے قومی سلامتی کے مشیر، ایچ آر مک ماسٹر اتوار کے روز کابل پہنچے جہاں انہوں نے افغان صدر سمیت دیگر سیاسی و عسکری رہنماؤں سے سلامتی کے امور اور سرزمین پر امریکی فوجوں کی ضروریات کا تخمینہ لگانے سمیت دیگر اہم امور پر بات چیت کی ۔صدارتی محل سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ غنی اور مک ماسٹر نے ''باہمی مراسم، سلامتی، انسدادِ دہشت گردی، اصلاحات اور ترقی'' کے بارے میں گفتگو کی۔افغان فوج کے معاون چیف آف آرمی اسٹاف، جنرل مراد علی مراد نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ کابل آمد کے فوری بعد، مک ماسٹر کی اپنے ہم منصب حنیف اتمر سے ملاقات ہوئی۔امریکی اہلکار کا یہ دورہ دہشت گردی کے سلسلے میں ''مشترک دشمن'' کو شکست دینے میں افغانستان کے اتحادیوں کیلئے ٹھوس حمایت کا غماز ہے، اپنے دورے میں مک ماسٹر افغان وزارتِ دفاع کے حکام سے بھی مذاکرات کرینگے اورافغان سکیورٹی کی کارروائیوں میں مدد دینے کیلئے فوجوں کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا۔مک ماسٹر کی ملک میں ایسے وقت آمد ہوئی ہے جس سے کچھ ہی روز قبل پاکستان کی سرحد سے ملحقہ مشرقی صوبہ ننگرہار میں داعش کے ایک مضبوط ٹھکانے پر امریکی فوج نے حملہ کیا،یاد رہے مک ماسٹرکے دورے سے قبل امریکی فوج کے کمانڈرزنے ٹیلی فون پر گفتگو کی تھی، جس کا مقصد افغانستان میں موجود 8400 فوج کی نفری میں ''مزید چند ہزار'' کا اضافہ کرنا تھا۔

مک ماسٹر دورہ

مزید : علاقائی