پنجاب میں گدھوں کی تعداد بڑھانے کا فیصلہ

پنجاب میں گدھوں کی تعداد بڑھانے کا فیصلہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) محکمہ لائیو سٹاک کی جانب سے لاہور سمیت پنجاب بھر میں گدھوں کی نسل کو بڑھانے اور غیر قانونی طور پر گدھوں کی کھال کی سمگلنگ سمیت گدھوں کے گوشت کی فروخت کی روک تھام کیلئے ایکشن پلان تیار کر لیا گیا۔ اس سے نا صرف گدھوں کی نسل بہتر ہو گی بلکہ قومی خزانے کو بھاری رقم بھی ملے گی۔ ذرائع کے مطابق محکمہ لائیو سٹاک کی جانب سے لاہور سمیت پنجاب بھر میں گدھوں کی نسل کو بڑھانے کے لیے لائحہ عمل تیار کرتے ہوئے گدھوں کی رجسٹریشن کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔ اب مرحلہ وار پنجاب بھر میں تمام گدھے رجسٹرڈ کئے جائیں گے۔ اس کے ساتھ ساتھ لائیو سٹاک پروڈکشن ریسریچ انسٹیٹیوٹ بہادر نگر اوکاڑہ میں گدھوں کیلئے باڑے بنائے گئے ہیں جہاں مختلف اقسام کے گدھوں کو رکھا گیا ہے۔اس حوالے سے پنجاب بھر کے گدھا مالکان کو موبائل ایس ایم ایس اور روب کال کے ذریعے میسج دیا جائے گا جس کے تحت محکمہ لائیو سٹاک خواہش مند حضرات سے گدھے خریدے گا اور ان کو بہتر طریقہ سے پالا جائے گا اور پھر پنجاب بھر کے 25 ہزار سے زائد دیہاتوں میں یہ تیار کیے گئے گدھے تقسیم کیے جائیں گے جہاں سے گدھوں کی مزید بہتر نسل حاصل کی جائے گی۔دوسرے مرحلے میں سیمن پروڈکشن یونٹ قادر آباد میں بھی گدھوں کے باڑے بنائے جائیں گے۔ اس اقدام سے غیر قانونی طور پر گدھوں کی کھال کی سمگلنگ میں کمی آئیگی اور قانونی طور پر گدھوں کی کھال دوسرے ممالک میں بھجوائی جائے گی۔ اس سے نا صرف گدھوں کی نسل بہتر ہو گی بلکہ گدھوں کے گوشت کی فروخت کا سلسلہ مکمل طور پر رک جائے گا۔ اس حوالے سے لائیو سٹاک ترجمان کا کہنا تھا کہ لاہور سمیت پنجاب بھر میں بہت جلد گدھوں کی رجسٹریشن کا عمل مکمل کر لیا جا ئے گا اور اس کی نسل کو بڑھانے کی بھرپور کو شش کی جائے گی