22اپریل کو گورنر ہاؤس پر تاریخی دھرنا دیا جائے گا ،حافظ نعیم الرحمن

22اپریل کو گورنر ہاؤس پر تاریخی دھرنا دیا جائے گا ،حافظ نعیم الرحمن

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی (اسٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ محکمہ بجلی کے خلاف 22اپریل کو گورنر ہاؤس پر تاریخی دھرنا ہوگا ،اب یہ تحریک مزید آگے بڑھے گی اور 18اپریل کو شفیق موڑ ، 20اپریل لانڈھی پر زبردست احتجاجی دھرنے دیے جائیں گے اور محکمہ بجلی ، نیپرا اور حکومتی گٹھ جوڑ کے خلاف عوا م کی طاقت کے ساتھ ظلم کے خلاف آواز اٹھائیں گے اور کراچی کے مسائل حل کر کے دم لیں گے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی کے تحت لیاری میں موٹر سائیکل ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ریلی سے امیر جماعت اسلامی ضلع جنوبی عبد الرشید ،سابق رکن سندھ اسمبلی بابو غلام حسین بلوچ، یوسی 6کے چیئرمین فضل الرحمن، سید طاہر اکبر اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر جماعت اسلامی کراچی کے سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری ، فتح محمد خان ، نائب امیر ضلع جنوبی امین بلوچ ،سابق رکن سندھ اسمبلی بابو غلام حسین اور دیگر بھی موجود تھے ۔ ریلی کا آغاز فٹبال ہاؤس چاکیواڑہ سے ہوا جوکہ بہار کالونی ،چیل چوک ، نوا لین، آگرہ تاج ، میرا ناکا ، شاہ بگ لین ، موسی لین تک نکالی گئی ۔ ریلی میں بچے ، بوڑھے او ر نوجوانوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی اورمحکمہ بجلی کے خلاف شدید غم وغصے کا اظہار کیا ۔ شرکاء نے پیلے رنگ کی شرٹ پہنی ہوئی تھی ۔ حافظ نعیم الرحمن نے مزید کہا کہ محکمہ بجلی اووربلنگ ختم کرے اور فیول ایڈجسٹمنٹ ، ڈبل بنک چارجز ،میٹر رینٹ Claw Back اور ملازمین کے نام پر غیر قانونی طور پر وصول کیے گئے 200ارب روپے کراچی کے عوام کو واپس کرے۔200,100اور 300یونٹ استعمال کرنے والے چھوٹے صارفین کے لیے نرخوں میں ظالمانہ اضافہ واپس لیا جائے۔ لوڈ شیڈنگ بند کی جائے۔انہوں نے کہا کہ آج نوجوانوں نے لیاری کی گلیوں اور سڑکوں پر ریلی نکال کر عوام کے اندر شعور بیدار کیا ہے ۔لیاری کو پیرس بنانے والوں کے دعوے کھوکھلے ثابت ہوئے ہیں ۔ لیاری کی گلیوں میں گندا پانی بہہ رہا ہے اور سڑکیں تباہ حال ہیں کوئی پرسان حال نہیں ہے ۔اعلانیہ اور غیر اعلامیہ لوڈ شیڈنگ سے طلباء شدید پریشانی کا شکار ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی واحد جماعت ہے جس نے کے ای ایس سی کے فروخت ہونے کے خلاف احتجاج کیا تھا لیکن اس وقت کے حکمرانوں نے مک مکا کر کیعوام کو نقصان پہنچایا اور آج محکمہ بجلی ایک مافیاکی صورت اختیار کرچکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک ایک کمرے کے گھر کا بل ہزاروں روپے کا بھیج دیا جاتا ہے ۔ہزاروں کی تعداد میں وفاقی محتسب کے پاس شکایات موجود ہیں محکمہ بجلی کے خلاف آنے والے فیصلوں کوصدر ممنون حسین کی سربراہی میں قائم کمیٹی کی جانب سے محکمہ بجلی کے خلاف فیصلے کو ختم کردیا جاتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میں حکومت سے مطالبہ کرتا ہوں کہ صدر ممنون حسین کی تحقیقات بھی ہونی چاہیئے