سی پیک پر سینٹ کی 20رکنی خصوصی کمیٹی کا تین روزہ اجلاس2مئی کو تربت گوادر میں طلب

سی پیک پر سینٹ کی 20رکنی خصوصی کمیٹی کا تین روزہ اجلاس2مئی کو تربت گوادر میں ...

اسلام آباد(آئی این پی)پاک چین اقتصادی راہداری پر سینٹ کی 20 رکنی خصوصی کمیٹی کا تین روزہ اجلاس 2 مئی کو تربت گوادر میں طلب کر لیا گیا،یہ اجلاس چھوٹے صوبوں کے تحفظات کے پیش نظر طلب کیا گیا ہے ،وزارت موصلات کو سی پیک کے تحت موٹرویزکے تمام منصوبوں اور ترجیحی مغربی روٹ پر جاری کاموں کی تفصیلات پیش کرنے کی ہدایت کردی گئی ،کمیٹی اراکین گوادر میں سی پیک کے تحت جاری ترقیاتی منصوبوں کا دورہ کریں گے، تربت میں عمائدین علاقہ سے ملاقات کریں گے، سی پیک کی تعمیر کی مختصر المیعاد درمیانی مدت اور طویل المدتی حکمت عملی پر بریفنگ دی جائے گی ،پانچ اہم وزارتوں مواصلات ‘ بندرگاہیں و جہاز رانی ‘ایوی ایشن ڈویژن ‘ ترقی منصوبہ بندی ‘ ریلویز کے سیکرٹریز ،نیشنل ہائی وے اتھارٹی اور گوادر پورٹ اتھارٹی کے سربراہان اور چیف سیکرٹری بلوچستان کو طلب کر لیا گیا ہے۔ بلوچستان کے ہوم سیکرٹری اور آئی جی کو سینٹ خصوصی کمیٹی کے اراکین کو فول پروف سیکیورٹی اور سیکیورٹی سکواڈ فراہم کرنے کی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔اس خبر رساں ادارے کو دستیاب ایجنڈے کے مطابق کمیٹی اراکین کو 2 مئی کو گوادر پورٹ اتھارٹی کے کانفرنس روم میں گوادر میں ایسٹ بے ایکسپریس وے، واٹر سپلائی، بندرگاہ میں مزید برتھوں اور چینلز کی تعمیر، پاک چین پیشہ واری و فنی ادارہ اور فریش واٹر ٹریٹمنٹ کے منصوبوں کے حوالے سے بریفنگ دی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق بعض معاملا ت پر تاحال چھوٹے صوبوں کے تحفظات کو دوراور اراکین سینٹ کو مطمئن نہیں کیا جا سکا ہے۔ اس صورتحال کے تدارک کے لئے سی پیک سینیٹ خصوصی کمیٹی نے ملک کے اہم حصوں میں سی پیک کے منصوبوں کے معائنہ کا فیصلہ کیا ہے۔ پہلے مرحلے میں کمیٹی اراکین تربت گوادر کا دورہ کریں گے۔ یاد رہے کہ کمیٹی میں تمام پارلیمانی جماعتوں بشمول قوم پرستوں کی نمائندگی ہے۔ کمیٹی کو چائنہ پاکستان فرینڈ شپ ہسپتال‘ فری زونز کے منصوبوں سے بھی آگاہ کیا جائے گا۔سول ایوی ایشن اتھارٹی کے سربراہ کو گوادر کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کا معائنہ کروانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ کمیٹی اراکین ریلوے ٹریک اور ریلوے اسٹیشن کا معائنہ بھی کریں گے ۔ صوبوں کے تحفظات پر وزارت مواصلات کو 3 مئی کو اجلاس میں سی پیک کے تحت موٹر ویز کے تمام منصوبوں کی تفصیلات کمیٹی میں پیش کرنے اور وزیر اعظم کی سربراہی میں اے پی سی میں تعمیر کے لئے ترجیح اول قرار دینے والے مغربی روٹ پر تعمیراتی کاموں سے آگاہ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ سیکرٹری مواصلات کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ کمیٹی کو تحریری طور پر سی پیک کی تعمیر کی مختصر المیعاد درمیانی مدت اور طویل المدتی حکمت عملی سے آگاہ کریں۔ 4 مئی کو اجلاس میں سیکرٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی سے سی پیک کے تحت گوادر سے دیگر علاقوں تک آپٹیکل فائبر کیبل بچھانے کے منصوبوں کی تفصیلات مانگ لی گئی ہیں۔ تمام متعلقہ 12 اداروں ‘ وزارتوں اور بلوچستان کے صوبائی محکموں کو تین روزہ اجلاس کے نوٹس بھجوا دئے گئے ہیں۔

خصوصی کمیٹی

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر