امریکہ کے بعد روس نے بھی اپنا جدید ترین میزائل چلادیا، اس کی ایک خصوصیت ایسی کہ اب امریکیوں کو نیند نہ آئے گی

امریکہ کے بعد روس نے بھی اپنا جدید ترین میزائل چلادیا، اس کی ایک خصوصیت ایسی ...
امریکہ کے بعد روس نے بھی اپنا جدید ترین میزائل چلادیا، اس کی ایک خصوصیت ایسی کہ اب امریکیوں کو نیند نہ آئے گی

  


ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ روس پر اپنی دھاک بٹھانے کے لیے فوجیں اور ہتھیار اس کے ہمسایہ یورپی ممالک میں پہنچا رہا ہے لیکن اب روس نے ایک ایسے میزائل کا تجربہ کر ڈالا ہے کہ امریکیوں کی نیندیں اڑ جائیں گی۔ ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق روس نے آواز کی رفتار سے 8 گنا تیز رفتار ’ہائپرسانک اینٹی شپ‘ میزائل کا تجربہ کیا ہے جسے روکنا ممکن نہیں۔ روسی فوجی سربراہ نے اس تجربے کی تصدیق کر دی ہے۔اس تباہ کن ’زرکون‘ (Zircon)میزائل کی رفتار 9ہزار 875کلومیٹر فی گھنٹہ ہے۔

’تم باز آجاﺅ ورنہ۔۔۔‘ 3 طاقتور ملکوں نے مل کر امریکہ کو سخت ترین وارننگ جاری کردی، نیا خطرہ پیدا ہوگیا

زرکون میزائل ایک ہی حملے میں برطانوی ایئرکرافٹ کیریئرز کو ملیامیٹ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ روسی نیوز ایجنسی TASSسے گفتگو کرتے ہوئے ذرائع کا کہنا تھا کہ ”روس رواں سال کے دوران زرکون میزائلوںکے مزید ماڈلز کے تجربات بھی کرے گا۔“ نیوی کے ایک سینئر آفیسر نے سنڈے پیپل کو بتایا کہ ”ہائپرسانک میزائل بنیادی طور پر روکے نہیں جاسکتے۔برطانوی ایئرکرافٹ کیریئرز زرکون میزائلوں سے بچنے کی کوئی صلاحیت نہیں رکھتے۔ ان کے پاس اس سے محفوظ رہنے کا صرف ایک ہی راستہ ہے کہ وہ اس کی رینج سے دور رہیں۔“

روس کی طرف سے یہ تجربہ امریکی فوجی قیادت کی طرف سے یہ بیان دیئے جانے کے بعد کیا گیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ وہ ایک ایسا تباہ کن میزائل بنانے پر غور کررہے ہیں جو آواز کی رفتار سے تین گنا زیادہ تیزی سے فائر کیا جا سکتا ہو۔

مزید : بین الاقوامی