ٹیم سلیکشن میں کبھی دخل اندازی نہیں کی : نجم سیٹھی

ٹیم سلیکشن میں کبھی دخل اندازی نہیں کی : نجم سیٹھی

اسلام آباد(سپورٹس ڈیسک)دورہ آئرلینڈو انگلینڈ کے لیے منتخب اسکواڈ سے تجربہ کار بلے باز فواد عالم کے اخراج کا معاملہ ایوانوں تک جا پہنچا ہے۔پیر کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے بین الصوبائی رابطہ کا اجلاس ہوا جس میں دورہ آئرلینڈ اور انگلینڈ کے لیے منتخب اسکواڈ کا معاملہ بھی زیر بحث آیا اور اراکین نے فواد عالم کو منتخب نہ کرنے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے اس کی وجوہات طلب کیں۔کمیٹی کے ارکان کا کہنا تھا کہ انضمام الحق کے بھانجے امام الحق کو سلیکشن کمیٹی نے ٹیم میں کیوں شامل کیا؟ فخر زمان کو ٹیسٹ سکواڈ میں کس کارکردگی کی بنیاد پر شامل کیا گیا؟۔ اجلاس کے دوران پی سی بی حکام نے پاکستان سپر لیگ کے ابتدائی 2 ایڈیشنز کے آڈٹ کے معاملہ پر بریفنگ دی۔اجلاس میں پی ایس ایل آڈٹ کے صرف 2 صفحات پیش کرنے پر کمیٹی ارکان نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جو دستاویز مانگی گئی ہیں وہ بورڈ نے فراہم ہی نہیں کیں جبکہ جو دستاویز فراہم کی گئیں وہ اس قابل نہیں کہ پڑھی جا سکیں۔کمیٹی نے ہدایت کی کہ پی ایس ایل میں فرنچائز کیساتھ معاہدوں اور گیٹ منی کی تفصیلات بھی فراہم کی جائیں۔ چیئرمین نجم سیٹھی نے کہا کہ آڈٹ میں تاخیر کی وجہ پی سی بی فنانشل حکام ہیں۔نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ سلیکشن میں کبھی دخل اندازی نہیں کی ،پی ایس ایل کا احتساب ضرور ہونا چاہیے۔انکا کہنا تھا کہ وہ قائمہ کمیٹی اجلاس کا خیر مقدم کرتے ہیں ،پی اسی ایل کی آمدن کے حوالے سے احتساب ضرور ہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ سلیکشن کے معاملات میں کبھی بھی دخل اندازی نہیں کی۔نجم سیٹھی نے بتا یا کہ بھارت کے خلاف مقدمے پر فیصلہ اکتوبر تک آجائے گا۔اس دفعہ پی ایس ایل میں 5ملین سے زائد آمدنی متوقع ہے جبکہ پچھلے سال پی ایس ایل سے 3ملین آمدنی ہوئی تھی۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...