ہیلتھ کیئر کمیشن کے چھاپوں کا خوف ، عطائی کلینک بند کرکے روپوش

ہیلتھ کیئر کمیشن کے چھاپوں کا خوف ، عطائی کلینک بند کرکے روپوش

لاہور(جاوید اقبال)محکمہ صحت،ہیلتھ کئیر کمیشن پولیس، ضلعی انتظامیہ جعلی اور عطائی ڈاکٹروں کے خلاف ایکشن پلان تیار کرتے رہ گئے جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے سینکڑوں عطائی اور جعلی ڈاکٹر اپنے کلینکس اور ہسپتالوں کو تالے لگا کر زیر زمین چلے گئے ہیں جس سے ان کے خلاف آپریشن کلین اپ شروع ہونے سے پہلے ہی دم توڑ گیا ہے ۔گزشہ48 گھنٹوں میں ضلع لاہور میں تشکیل دی گئی دس ٹیمیں تمام تر کوششوں کے باوجود بڑے نتائج برآمد نہیں کر سکیں اورصرف اکا دکا کارروائی میں جعلی ڈاکٹروں کے کلینک سیل کئے گئے ۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کے چیف جسٹس نے جعلی ڈاکٹروں کے خاتمے کے لئے فی الفور عطائی ڈاکٹروں کی گرفتاری کا حکم دیا جس کے بعد ایکشن پلان تیار کرنے کے لئے مذکورہ محکموں نے تین دن گزار دئیے اور 48 گھنٹے گزرنے کے بعد تینوں محکمے اس نکتے پر متفق ہوئے ہیں کہ جعلی ڈاکٹروں کے خلا�آئین کی دفعہ 269‘270‘420اور 419کے تحت مقدمات درج ہوں گے جس کا فائدہ جعلی اور عطائی ڈاکٹروں نے خوب اٹھایا اور شہر کے 9زونوں اور دو کنٹونمنٹس بورڈز کی حدود میں سوا لاکھ کے قریب عطائی ہیں جن میں سے98 فیصد اپنے کلنیکس کو تالے لگا کر زیر زمین چلے گئے ہیں ۔گزشتہ روز شام کے وقت ڈی ڈی اور گلبرگ ڈاکٹر احمد غوث‘ ڈی ڈی او کینٹ ڈاکٹر خالد اور فیروز والہ کے ڈپٹی ڈرگ کنٹرولر بلال یاسین نے عطائیوں کے خلاف آپریشن کیا مگر98 فیصد ڈاکٹروں کے کلینک بند پائے گئے۔اس حوالے سے ضلع لاہور محکمہ صحت کے ترجمان ڈاکٹر احمد غوث سے بات کی گئی توانہوں نے کہا کہ یہ بات سچ ہے کہ عطائی زیر زمین چلے گئے ہیں اب کارروائی کے لئے وقت درکار ہو گا کہ وہ کب واپس آئیں اور کب ہم انہیں پکڑیں مگر ڈپٹی کمشنرنے شہر کوعطائیوں سے صاف کرنے کے لئے ایک ہفتے کا ٹاسک دیا ہے جو کہ ہر حال میں پورا کریں گے۔

عطائی

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...