توہین عدالت کیس ، دانیال عزیز کے وکیل کی گواہ کو دوبارہ بلانے کی استدعامسترد

توہین عدالت کیس ، دانیال عزیز کے وکیل کی گواہ کو دوبارہ بلانے کی استدعامسترد

اسلام آباد (آئی این پی) سپریم کورٹ کے جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا ہے کہ بار بار ایک گواہ بلا کر وقت ضائع نہ کریں، آپ ویڈیو کے متن کو پہلے ہی تسلیم کر چکے ہیں، تاخیری حربے استعمال نہ کریں، سیدھا چلیں گے تو آپ کیلئے بہتر ہو گا، سپریم کورٹ نے دانیال عزیز کے وکیل اور گواہ حاجی آدم کو دوبارہ عدالت بلانے کی استدعا مسترد کر دی۔پیر کو سپریم کورٹ میں دانیال عزیز توہین عدالت کیس کی سماعت جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں 3رکنی بینچ نے کی۔ دانیال عزیز کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ دو گواہان کی طلبی کیلئے درخواست دی ہے، جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس میں کہا کہ ایک گواہ تو پہلے ہی پیش ہو چکا ہے، بارب ار ایک گواہ کو بلانے سے وقت ضائع ہو گا۔وکیل علی رضا نے کہا کہ گواہ نے وہ مواد پیش نہیں کیا جو آپ کودرکار ہے۔ جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ آپ گواہ سے مواد بھی منگوا سکتے ہیں، وکیل نے جواب دیا کہ نجی ٹی وی کے کلپ کی تصدیق کرانی ہے۔جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ آپ متن کو پہلے ہی تسلیم کر چکے ہیں، ویڈیو سے متعلق پیمرا گواہ پر جرح کر چکے ہیں،جو گواہ متعلقہ نہیں انہیں بلا کر کیا کرنا ہے، پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ دانیال عزیز کے گواہ غیر متعلقہ ہیں، عدالت کے سامنے معاملہ ایڈیٹنگ کا نہیں ہے۔ عدالت نے دانیال عزیز کے وکیل کی حاجی آدم کو دوبارہ بلانے کی استدعا مسترد کر دی۔ جسٹس شیخ عظمت نے کہا کہ تاخیری حربے استعمال نہ کریں، سیدھا چلیں گے تو آپ کیلئے بہتر ہو گا، کیس کی مزید سماعت 24اپریل تک ملتوی کر دی گئی۔

دانیال عزیز

مزید : صفحہ آخر