باردانہ حصول کیلئے درخواستوں کی وصولی شروع ، حکومتی پالیسی سے متاثر ہ کاشتکا مایوس

باردانہ حصول کیلئے درخواستوں کی وصولی شروع ، حکومتی پالیسی سے متاثر ہ کاشتکا ...

ملتان ‘ خانیوال ‘ محسن وال ‘ ٹھٹھہ صادق آباد ‘ ڈیرہ غازیخان ‘ جھوک اترا ‘ راجن پور ‘ کوٹلہ نصیر ‘ لیہ ‘ تونسہ شریف ‘ علی پور ‘ بہاولپور(بقیہ نمبر44صفحہ12پر )

خانقاہ شریف ‘ حاصل پور ‘ ڈاہرانوالہ ( سپیشل رپورٹر ‘ نمائندگان ) ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں قائم گندم خریداری مراکز پر بار دانہ کے حصول کیلئے درخواستوں کی وصولی کا سلسلہ شروع کردیا گیا نامکمل گردواری اور 10ایکٹر سے زاءئد کے کاشتکاروں میں درخواستوں کی وصولی نہ ہونے پر مایوسی کی لہر دوڑ گئی ۔ کاشتکار حلقوں نے خریداری پالیسی نسالی دشمن قرار دیدی تفصیل کے مطابق حکومت پنجاب کی گندم خریداری پالیسی کے تحت ضلع ملتان کے 17گندم خریداری مراکز پر گندم کے کاشتکاروں سے باردانہ کے حصول کیلئے درخواستوں کی وصولی کا سلسلہ گزشتہ روز سے شروع کردیا گیا ہے ۔درخواستوں کی وصولی کے پہلے روز بیشتر مراکز پر کسانوں کی گندم کی کاشت کے حوالے سے گرداوری فہرسیتں نامکمل ہونے کے باعث سینکڑوں کاشتکار درخواستیں جمع کرانے سے محروم رہے جبکہ بیشتر مراکز پر 10ایکڑ سے زائد فصل کے کاشتکاروں سے بھی درخواستوں کی وصولی نہ کی گئی جس کے باعث ان میں مایوسی کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ضلعی انتظامیہ کی جانب سے جاری کردہ اعداد شمار کے مطابق ضلع ملتان کے گندم خریداری مراکز پی آر ۔ٹو پرگزشتہ روز 110،سٹیل سائیلوز پر 300،جبکہ مخدوم رشید مرکز پر 700کاشتکاروں سے درخواستیں وصول کی گئی جبکہ دیگر 15مراکز کا ڈیٹااپ لوڈ نہیں کیا جاسکا تھا ۔باردانہ حصول کیلئے درخواستوں کی وصولی کا سلسلہ آج بھی جاری رہے گا۔دریں اثنا کمشنر ملتان ڈویژن بلال احمد بٹ نے کہا ہے کہ گندم خریداری مراکز پر تمام سہولیات کو یقینی بنایا جائے۔ تمام ڈپٹی کمشنرز اپنے اضلاع اور اسسٹنٹ کمشنرز تحصیلوں کے گندم خریداری مراکز کا روزانہ دورہ کریں اور کاشتکاروں کو درپیش مسائل کا فوری ازالہ کریں۔ کاشت کاروں کے لئے ٹھنڈا پانی، سایہ دار جگہ اور پنکھوں کا لازمی بندوبست کیا جائے جبکہ تمام مراکز پر کمپیوٹرائزڈ کنڈے اور سی سی ٹی وی کیمرے بھی نصب کئے جائیں۔ ٹریفک کی روانی کو برقرار رکھنے کے لئے مناسب پارکنگ اور سکیورٹی کو بھی یقینی بنایا جائے۔ ان خیالات کا اظہار ڈویژن بھر میں باردانہ کے اجراء اور گندم خریداری کے حوالے سے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ایڈیشنل کمشنر سرفراز احمد، اے ڈی سی ریونیو ملتان کامران خان، ایڈیشنل کمشنر سرفراز احمد، اسسٹنٹ کمشنرز مسعود احمد بخاری، رانا اخلاق جبکہ ویڈیو لنک پر ڈویژن کے تمام ڈپٹی کمشنرز اور متعلقہ افسران بھی موجود تھے۔کمشنر ملتان بلال احمد بٹ کو ڈپٹی ڈائریکٹر فوڈ حق نواز چوہان نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ڈویژن بھر میں 48گندم خریداری مراکز فعال کردئیے گئے ہیں۔جس میں ضلع ملتان میں17، وہاڑ ی میں 12، خانیوال میں 14اور لودھراں میں 5سنٹرز بنائے گئے ہیں۔۔ خانیوال سے نمائندہ پاکستان اور بیورو نیوز کے مطابق ڈپٹی کمشنر مظفر خان سیال نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب پنجاب کی ہدایت پرضلع خانیوال میں باردانہ کی فراہمی کے لیے درخواستوں کی وصولی کا آغاز کردیا گیا ہے جو کہ 20اپریل تک جاری رہے گی اس سلسلہ میں گندم خریداری سنٹر پر تمام انتظامات مکمل کرلیے گئے ہیں اورتمام متعلقہ افسران وملازمین اپنی ڈیوٹیاں احسن طریقہ سے سرانجام دیں ۔یہ بات انہو ں نے گندم خریداری سنٹر خانیوال کے اچانک معائنہ کے دوران کہی ۔ اس موقع پر اے ڈی سی جی آغا ظہیر عباس شیرازی سمیت متعلقہ افسران بھی ان کے ہمراہ تھے ۔ انہوں نے کہاکہ ضلع خانیوال میں گندم خریداری کا ٹارگٹ 1لاکھ 85ہزار میٹرک ٹن مقرر کیا گیا جس کے لیے ضلع خانیوال میں 14گندم خریداری سنٹرز قائم کردئیے گئے ہیں محسن وال سے نمائندہ پاکستان کے مطابق پنجاب حکومت کی طرف سے بنائی گئی گندم خریداری کی پالیسی کسان دشمن ہے ،ان خیالات کااظہارمیاں عمیر مسعور مرکزی جنرل سیکرٹری پاکستان کسان اتحاد ،چوہدری رضوان اقبال صوبائی صدر، چوہدری افتخار احمد ضلعی صدر وہاڑی ،کیپٹن محمد حسین ٹی جے ضلعی صدر ساہیوال ،ملک حفیظ ضلعی صدر بہاولپور،ایم ڈی گا نگا ضلعی کو ارڈ ینیٹر رحیم یار خان ،احمد فراز مانیکا ضلعی صدر اوکاڑہ ،سردار اور نگ زیب ضلعی صدر قصور ،دلشاد متیا نہ ضلعی صدر بہاولنگر ،رانا محمد امین ضلعی صدر لو دھراں ،اظہر سیال ضلعی صدر جھنگ نے اپنے مشترکہ بیان میں کیا ،انھوں نے کہا کہ10ایکڑسے زیادہ کے کاشتکار کو باردانہ جاری نہ کیا جائے گا جوکہ سراسر زیادتی ہےْ۔ ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کے مطابق گندم خریداری سنٹر ٹھٹھہ صادق آباد پر سنٹر کوآڈینٹر محمد مدثر ،فوڈ انسپکٹر ملک تصور ،افتخار احمد کی طرف سے گندم خریداری پالیسی کے تحت گزشتہ روز باردانہ فراہمی کیلئے درخواستوں کی وصولی شروع کردی گئی ہے،مارکیٹ کمیٹی جہانیاں کی طرف سے فوڈ سنٹر پر کسانوں کیلئے سایہ دار جگہ،بیٹھنے کیلئے کرسیوں،پینے کیلئے ٹھنڈے پانی کا بھی انتظام کیا گیا ہے،سنٹر کوآڈینٹر کی طرف سے پہلے روز 1500سے زائددرخواستیں وصول کی گئیں،جبکہ کل 300سے زائد درخواستیں مکمل کرکے آن لائن کی گئیں۔ ڈیرہ غازیخان سے سٹی رپورٹر کے مطابق .ضلع ڈیرہ غازیخان کے کاشتکاروں سے 96000میٹرک ٹن گندم خریدنے کا عمل شروع کر دیا گیاہے . 20اپریل تک کاشتکاروں سے درخواستیں طلب کی جائیں گی 21اور 22اپریل کو درخواستوں کی سکروٹنی اور 24اپریل کو باردانہ جاری کیا جائے گا . زیادہ اور چھوٹے کاشتکاروں کو مستفید کرنے کیلئے ایک کاشتکار کو دس ایکڑتک بار دانہ دیاجائے گا. ضلع کے نو خریداری مراکزپر کوآرڈینیٹرز اور آن لائن ریکارڈ کیلئے آئی ٹی ٹیچرز تعینات کر دیئے گئے ہیں . 24مئی تک جاری رہنے والی 30روزہ مہم کی کڑی نگرانی کی جائے گی . وزراء ، سیکرٹریز ، کمشنر، ڈپٹی کمشنرز اور دیگر افسران اچانک معائنہ کریں گے . یہ بات ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو ؍ ضلعی فوکل پرسن میاں محمد اقبال مظہر مہار نے یہاں بتائی۔ جھوک اترا سے نمائندہ پاکستان کے مطابق اے سی کوٹ چھٹہ عبدالجبار کھوکھر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ فوڈ سنٹر کوٹ چھٹہ نے زمینداروں کے باردانہ حصول کیلئے درخواستیں وصول کر لی ہیں اور آج پانچ بجے تک زمینداروں کو رسیدیں دینے کا سلسلہ شروع کر دیا جائیگا اور اس کے بعد ڈیرہ غازیخان میں ایک کمیٹی بنا دی ہے جو درخواستوں کی چھان بین کر کے پہلے مرحلہ میں چھوٹے کاشکاروں کے نام شامل کر کے ان کی ہتمی لسٹ جاری کر ے گی۔ ادھر پالیسی کے تبدیل ہوتے ہی سنٹر پر بیوپاری سمیت ٹاوٹ مافیا پریشان دکھا ئی دینے لگے ہیں دوسری جانب عینی شاہدین کے مطابق موقع پر نہ آنے والے ایم پی اے سردار محمود خان لغاری کے قریبی ساتھیوں کے نام خصوصی لسٹ میں ڈال دیے ہیں جس پر کاشتکاروں کو مایوسی کا سامنا ہے۔ راجن پور سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق کسانوں محمد نواز ، محمد حسین ، محمد حسن ودیگر نے احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ کسانوں کیلئے سہولیات کی فراہمی صرف زبا نی کلامی کی باتیں ہیں عملی طور پر کوئی کارکردگی نظر نہیں آتی ،دریں اثنا گندم خریداری کا عمل شروع ہو چکا ہے۔ضلع بھر میں نو خریداری سنٹرز بنائے گئے ہیں۔کسان ہمارا اثاثہ ہیں ۔باردانہ کی تقسیم بلا تفریق ہو گی ۔کسی بھی قسم کی شکایت کی گنجائش نہیں ہونی چایئے۔مرکز خریدگندم پر آنے والے کسانوں کو سہولیات فراہم کی جائیں۔یہ باتیں ڈپٹی کمشنر راجن پور اشفاق احمد چوہدری نے مختلف گندم خرید مراکز کا معائنہ کرتے ہوئے کہیں۔اس موقع پر اے ڈی سی آر میاں غلام رسول،اسسٹنٹ کمشنر راجن پورشاہدمحبوب اور محکمہ فوڈ کے افسران بھی موجود تھے۔لیہ سے نمائندہ پاکستان‘ نامہ نگار کے مطابق ضلع لیہ میں گندم کی شفاف بنیادوں پر خریداری کے لیے موثر مانیٹرنگ کا عمل جاری ہے اور درخواست وصولی کے پہلے روز 7خریداری مراکز پر 3283درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔یہ بات ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر زاہد پرویز نے کروڑ ،فتح پور اور جمال چھپری سنٹرز کے معائنہ کے موقع پر بتائی ۔اس موقع پر انہوں نے فراہم کردہ سہولیات کا جائزہ لیااور کاشت کاروں سے درخواست دینے کے بارے میں معلومات حاصل کیں۔تونسہ شریف سے تحصیل رپورٹر کے مطابق فوڈ سنٹر تونسہ شریف پی آر تونسہ ریف انتہائی بدنظمی کا شکار رہا ۔ آرھتیوں اور نام نہاد شرفا کے اپنی 40,40افراد کی لسٹیں ایک ساتھ جمع کرکے پٹواریوں اور ریونیو افسران سے مل ملاپ کرکے سرعام اپنے بندے پیراٹی رجسٹرڈ میں فائنل کرادیے ساران دن زمیندار کا شتکار تپتی دھوپ میں عملہ وانتظامیہ کا مئنہ دیکھتے رہے منشی پٹواریان کوارڈنیٹر بن گئے 300آڑھتیوں کے آدمی کے شامل رجسٹرڈ کرکے بار دانہ کے اجر کے لیے فائنل کردیا گیا جبکہ موقع پر موجود کسانوں زمینداروں ، کاشتکاروں اور کسان تنظیموں کے نمائندوں اور سپروائزر کمیٹی کے ارکان نے مذکورہ عمل پر تشویش کا اظہار کیا ۔ علی پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق پاسکو پر قرعہ اندازی کے بعد باردانہ فراہم کیاجائے گا،قرعہ اندازی کافیصلہ حتمی ہوگا، شفاف قرعہ اندازی پر کوئی کمپرومائز نہ ہوگا، تحصیل علی پوراور تحصیل جتوئی کیلئے ساڑھے چھ لاکھ باردانہ کاٹارگٹ ہے۔آخری قرعہ اندازی 25اپریل کو ہوگی۔ ان خیالات کااظہار اسسٹنٹ کمشنر علی پورعمران شمس،اسستنٹ کمشنر جتوئی اورنگزیب سندھو،ڈی جی ایم پاسکو میجر ظہوراحمد راجہ نے میونسپل کمیٹی روم علی پورمیں زمینداروں،کاشتکاروں،گورنمنٹ افرسان اورشرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ جن سنٹرز پر کوٹہ کم تھان ان کاٹارگٹ بڑھا دیا گیا ہے۔سنٹر انچارج کی مہراوردستخط سے بیلٹ پیپر کے ذریعے قرعہ اندازی ہوگا۔ بہاولپور سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق وزیراعلی پنجاب کی ہدایت پرگندم خریداری مراکز پرباردانہ کے اجراء کیلئے درخواستوں کی وصولی جاری20 اپریل کے بعدسیکروٹنی اور24 اپریل سے میرٹ پرباردانہ کااجراء کیاجائیگا ان خیالات کااظہار ڈسٹرکٹ فوڈکنٹرولر بہاولپورچوہدری تنویر نصرت وڑائچ نے اسسٹنٹ کمشنر صدرسرمدتیمور کے ہمراہ گندم خریداری مرکز بنی شیلز کے دورہ کے موقع پر کاشتکاروں سے گفتگوکرتے ہوئے کیا اسسٹنٹ کمشنر صدرسرمدتیمور نے کہاکہ کاشتکاروں کومیر ٹ پرباردانہ کے اجرا اورسکیورٹی کی بھرپورسہولت کیلئے اقدامات کیے گئے ہیں ڈی ایف سی تنویرنصرت وڑائچ نے صحافیوں کوبتایاکہ ضلع بھرمیں28 گندم خریداری مراکز قائم کیے گئے ہیں ۔ خانقاہ شریف سے نمائندہ پاکستان کے مطابق مرکز گندم خریداری خانقا ہ شریف پر پہلے روز مبینہ فوڈا نسپکٹر چوہدری عبدالستار کی کواڈینیٹرحافظ مسعود کی آپس میں مبینہ ڈیل صبح سویرے لائین میں لگنے والوں گندم کاشتکاروں کی دس پندرہ فائلیں وصول کرکے رسیدبنا کر کواڈینیٹر نے فوڈ انسپکٹر کے کہنے پر رسید بک کے دس پندرصفحات چھوڑ کر اپنے لوگو ں کے نام درج کردےئے جبکہ صبح سویرے آکر لائین میں لگے کاشتکارارشد ،ملک اظہر،گلاب ،خلیل ،صادق ،خالد ،اسلم ،شکیل، شہراد ،حنیف،افضل ،رفیق ،عمران ،نذرحسین ،اور بزرگ بھی شامل تھے گھنٹوں لائین میں لگے رہے انہوں نے احتجاج کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر بہاول پور سے فوری نوٹس لے کر ان کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے حاصل پور سے نامہ نگار کے مطابق کسانوں کو باردانہ میرٹ پر تقسیم کیا جائے گا۔مافیا گروپ سنٹروں کا رخ نہ کرے۔ اسسٹنٹ کمشنر شیخ محمدطاہر کا مختلف سنٹروں کو دورہ اس موقع پر انہوں نے صحافیوں کو بتایاکہ حکومت کی طرف سے کسانوں کی گندم کا ریٹ 1300 روپے مقرر ہونے کے بعد آج حاصل پور، قائم پور ، جمال پور منڈی چھونا والاا ور دیگرسنٹروں پر باردانہ کے حصول کے لیئے کسانوں نے درخواستیں جمع کروائیں۔ ڈہرانوالہ سے نامہ نگار کے مطابق ڈپٹی کمشنربہاولنگر محمد اظہر حیات ،ڈی پی او بہاولنگرعطاء الرحمن نے اچانک مرکز خرید گندم ڈاہرانوالہ کا دورہ کیا۔انھوں نے گندم خریداری مرکز میں بار دانہ کی تقسیم کے حوالے سے انتظامات کا جائزہ لیا اور بار دانہ کی منصفانہ تقسیم یقینی بنانے پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ بار دانہ کی غیر منصفانہ تقسیم ہر گز برداشت نہیں کی جائے گی۔گندم خریداری مراکز میں عوام کو بہترین سہولیتیں مہیا کی جائیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر