عدالت عالیہ نے پہلی بار نظر یہ ضرورت کو دفنکر کے منتخب وزیر اعظم کو کرپشن میں گھر بھیجا:عمران خان

عدالت عالیہ نے پہلی بار نظر یہ ضرورت کو دفنکر کے منتخب وزیر اعظم کو کرپشن میں ...

شیرگڑھ( نامہ نگار) پاکستان تحریک انصاف کے قائد عمران خان نے کہاہے کہ اقتدار میں آتے ہی فاٹا کو صوبہ خیبر پختونخوا میں ضم کریں گے ملک کی اعلیٰ عدلیہ نے پہلی بار نظریہ ضرورت کو دفن کرکے ایک طاقتور وزیراعظم کوکرپشن میں گھر بھیج دیا فوج کے خلاف باتیں کرنے والے ہمارے دشمن ہیں ملک کے تمام لٹیرے ملکی اداروں اور سپریم کورٹ پر حملے کررہے ہیں ججوں کے گھروں پر گولیاں چلائی جارہی ہے حکومت جے آئی ٹی کے پیچھے پڑی ہے جسٹس اعجاز الحسن اورواجد ضیاء آپ کے پیچھے قوم کھڑی ہے 29اپریل کو مینار پاکستان میں عدلیہ کا ساتھ دینے اور چوروں، لٹیروں اور کرپٹ طاقتورمافیا کے خلاف ایک بڑا جلسہ کریں گے مولانا فضل الرحمان کے ہوتے ہوئے یہودیوں کو سازش کی ضرورت نہیں مولانا ڈیزل ہر حکومت میں باری لینے آتے ہیں کشمیر کمیٹی کے چیرمین کی حیثیت سے مختلف ملکوں کے صرف چکر لگارہے ہیں اورانڈیا نہتے کشمیر یوں پرظلم کے پہاڑ توڑ ے جارہے ہیں آپ ہر حکومت میں شامل ہوسکتے ہیں لیکن میں آپ کو مزیدمزیں نہیں کرنے دوں گا 300ارب روپے چوری کرنے والے جلسیوں میں روتے ہیں کہ مجھے کیوں نکالاپہلے اورنج ٹرین، ڈیزل، موٹر وے اور میٹرو میں کرپشن کرکے عوام کے پیسے چوری کرتے ہیں پھر دوسری جرم کرکے منی لانڈرنگ کرلیتے ہیں پھر ڈالرز لے کر بھیک مانگنے پرمجبور کرتے ہیں اس کے بعد قرضے لیتے ہیں جس سے غریب غریب تر اور امیر امیرتر ہوتا جارہاہے اسفندیارولی، اچکزئی اور زرداری بھی جمہوریت بچانے کی باتیں کرتے ہیںآپ لوگوں نے تو جمہوریت کا بیڑہ غرق کیا چوری میں آپ سب میاں صاحب کے دست راست ہوتے ہیں عدلیہ کے فیصلے پر ساری قوم خوش ہیں پہلی بارایک طاقتور مافیا کو انصاف کے کٹہرے میں کھڑا کیاان خیالات کا اظہار انہوں نے ہاتھیان (شیرگڑھ) میں ایک بڑے شمولیتی جلسہ عام سے خطاب کے دوران کیا اس موقع پر سابق ممبر قومی اسمبلی حاجی سرفراز خان اورامیر سرفراز خان نے خاندان سینکڑو ساتھیوں سمیت پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا عمران خان نے پارٹی میں شمولیت پر مبارک باد دی اور ان کوپارٹی ٹوپیاں پہنائی جلسہ عام سے وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک،ممبر قومی اسمبلی علی محمد خان، مراد سعید،امیر سرفراز خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا اس موقع پر ڈاکٹر یاسمین راشد بھی موجود تھی انہوں نے مزید کہاکہ ماضی میں آصف علی زرداری وزیراعظم ہاؤس سے جیل اور جیل سے وزیراعظم ہاؤس آتے جاتے تھے اب وہ کھیل ختم ہوگیا اب ان کو صرف جیل کی یاترا ہوگی اور اب وہ کھبی بھی وزیراعظم ہاؤس یا صدارتی ہاؤس نہیں جائیں گے انہوں نے کہا کہ ملک کی عدلیہ نے پہلی دفعہ ایک طاقتور وزیراعظم کو نکالا ہم سپریم کورٹ کو سلام کہتے ہیں آپ دھمکیوں سے مت ڈریں ہماری کوششوں سے ایک نیا پاکستان کی بنیاد رکھ دی گئی ہے جہاں قانون سب کے لئے برابرہوگا انہوں نے کہاکہ ملک کے چار وں زراء اعلیٰ میں سب سے زیادہ پروٹوکول خادم اعلیٰ شوباز شریف کا ہے دوسرے نمبر پر سندھ کاوزیراعلیٰ، تیسرے نمبر پر بلوچستان کا وزیراعلیٰ اورسب سے آخر میں ہمارا ملنگ وزیراعلیٰ پرویز خٹک ہے انہوں نے کہاکہ ہم آپ لوگوں کے پیسوں پرعیاشیا ں نہیں کریں گے یہ آپ لوگوں کی امانت ہے میں مخالفین کو کھلاچیلنج دیتاہوں کہ میں نے ان پانچ سالوں میں ایک روپیہ بھی کے پی کے حکومت کا خرچ نہیں کیا ہے انہوں نے کہاکہ اقتدار میں آتے ہی ہم ٹیکس سب زیادہ اکٹھا کریں گے اگرآپ نے ہمیں موقع دیا تو قوم کو مایوس نہیں کریں گے میں خود کبھی جھکا ہوں اور نہ قوم کوجھکنے دوں گا انہوں نے کہاکہ ماضی میں صدرایوب خان کو ائیرپورٹ پر امریکی صدرخود لینے آتے تھے اوراب ہمارے وزیراعظم کے بھی کپڑے اتارے جاتے ہیں جو بحیثیت قوم ہماری بے عزتی ہے انہوں نے کہاکہ ہم بھیک مانگنے کی روایت ختم کریں گے میں سب سے زیادہ پیسے اکٹھے کرتاہوں نمل یونیورسٹی ،شوکت خانم وغیرہ کے لئے اور قوم دیتی بھی ہیں اس کے لئے ہمیں قوم کو اعتماد میں لیناہوگا ہم پہلے اپنے ادارے مضبوط کریں گے تمام ملک میں کے پی کے پولیس کی تعریفیں کی جارہی ہیں تعلیم کا بہترین نظام بھی پختونخوا کا ہے شہرام خان نے کے پی کے ہسپتالوں کی حالت زار بھی ٹھیک کیاہے بلدیاتی نظام بھی ہمارا بہترین ہے نوجوانوں کی بہترین مستقبل کے لئے ایک ارب درخت اگائے ہیں اور پورے پاکستان کو ہرا کرکے بنائیں گے انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف کے جن ایم پی ایز نے ضمیر بیچا جو14یا 17بتائے جاتے ہیں ایک ایک کو پارٹی سے نکالیں گے چاہے الیکشن ہارے لیکن ضمیر فروشوں کو نکالیں گے انہوں نے نوجوانوں کو خبردار کیاکہ2018کے الیکشن کے لئے تیار رہیں اسلامی فلاحی ریاست بناکر دکھائیں گے ہم ایک خوددار قوم بنائیں گے انہوں نے کہاکہ ایک تنظیم پاکستانی فوج کے خلاف باتیں کرتے ہیں فوج کے خلاف باتیں کرنے والے ہمارے دشمن ہیں حکومت قبائلی علاقوں کو پختونخوا کے ساتھ فوری طور پر ضم کریں صرف مولانا فضل الرحمان اورمحمود خان اچکزئی ضم کرنے کے خلاف ہیں قبائل میں کوئی نظام نہیں آپ بے فکر ہوجائیں حکومت میں آتے ہی ضم اور تمام مشکلات ختم کرائیں گے پوری اسلامی دنیا میں آگ لگی ہوئی ہے ہم فوج اور قبائل کے ساتھ کھڑے ہیں

شیرگڑھ(نامہ نگار)صوبہ خیبر پختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک نے کہاہے کہ اب مولانا فضل الرحمان، اسفندیار ولی،پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ کی صوبہ خیبر پختونخوا میں باریاں نہیں آئیں گی باریاں بدل بدل کر کرسی اقتدار کی مزے لوٹنے کا دور گزر گیاپی ٹی آئی کی حکومت نے اداروں کو سیاسی مداخلت سے آزاد کراکے جہاں اداروں کا وقار بحال کیا وہاں ادارے عوام کے خادم بنادئیے 2018کے انتخابات یکطرفہ ہوں گے پی ٹی آئی نوجوانوں کی پارٹی ہے پی ٹی آئی کا مقابلہ کسی بھی سیاسی جماعت کی بس کی بات نہیں ہماری حکومت سے قبل حکومتوں نے صوبہ کو تباہی کے دھانے کھڑا کیا مجھے معاشی ،امن،صحت،تعلیم اور مالی اعتبار سے تباہ حال صوبہ وراثت میں ملا مگر ہماری حکومت نے صوبہ خیبر پختونخوا کو ہر اعتبار سے پاکستان کا ٹائیگر صوبہ بنادیا وہ ہاتھیان شیرگڑھ کے مقام پر ایک بہت بڑے شمولیتی جلسہ عام سے خطاب کررہے تھے جلسہ سے امیر سرفراز خان،صوبائی وزیرتعلیم محمد عاطف خان، ایم این اے علی محمد خان، مراد سعیداور دیگر نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی نے صوبہ میں مثالی حکمرانی کرکے عوام کے توقعات کے مطابق حقیقی تبدیلی لائی پولیس کو سیاسی مداخلت سے آزاد کرکے عوام کا خادم بنادیااب پولیس تھانوں میں آنے والوں کو شک کی نگاہ سے نہیں دیکھیں گے بلکہ ان کو عزت دیں گے اگر کہیں پر کوئی پولیس والے یا پولیس تھانے میں کسی کے ساتھ زیادتہ ہوگئی ہوں تو مجھے اس میدان میں بتایا جائیں تاکہ ان کو کان سے پکڑ کر چلتا کروں انہوں نے کہاکہ ہماری حکومت نے قوم کو اعلیٰ تعلیم اور صحت کی بہترین سہولیات فراہم کئے غریب کا بچہ ٹھاٹ سے اٹھاکر کرسی پر بٹھادیا سکولوں میں اساتذہ اور ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کی کمی کو دور کیا اختیارات سے تجاوز کرنے والوں کے ہاتھ باندھ دئیے انہوں نے کہاکہ ہماری حکومت سے قبل صوبہ میں ملازمتیں اور تبادلے فروخت ہوتے تھے لوگ انصاف کے لئے ترستے تھے ہم نے رشوت کا سلسلہ ختم کرکے تبادلوں اور ملازمتوں کو میرٹ کی بنیاد پر ممکن بنادئیے دیوانی مقدمات کا فیصلہ اب ایک سال کے اندر اندر ہوگا پورے پاکستان کے تینوں صوبوں کی طرز حکمرانی میں ہماری تقلید کرنے پر مجبور ہیں انہوں نے کہاکہ ایم ایم اے کو سیڑھی بناکر کرسی اقتدار کو پہنچنے کا خواب دیکھنے والے مولانا ڈیزل اسلام کے لئے نہیں بلکہ اسلام آباد کے لئے بے قرار ہے پانچ سال اس صوبہ میں ایم ایم اے نے حکومت کی ہے مولانا فضل الرحمان آکر میرے ساتھ مناظرہ کریں کہ ان کی حکومت نے اسلام کی کتنی خدمت کی ہے ہماری حکومت نے سود ی کاروبار پر پابندیاں عائد کی ناجائز جہیز کے لئے قانون بنایا ختم نبوت کو نصاب کا حصہ بنایا چٹھی جماعت تک ناظرہ قرآن اور بارویں جماعت تک ترجمہ قرآن پاک لازمی قرار دیا مساجد کے خطیبوں اور اماموں کے لئے وظیفہ مقرر کیا اب پچیس ہزار علماء کرام کو وظیفہ ملے گا ہماری حکومت کی ان اصلاحات نے مولانا فضل الرحمان کے پیٹھ میں مروڑ پیدا کیا اور واویلا کررہے ہیں کہ علماء کو این جی اوز کا حرام پیسہ وظیفہ کے طور پر دیاجارہاہے انہوں نے کہاکہ قوم گواہ رہے یہ پیسہ حلال کا پیسہ ہے کسی این جی اوز یابیرونی ملک کا نہیں

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...