شام اور قندوز کے مدرسوں کے طلباء پر بمباری کھلی دہشتگردی ہے :اکرم خان درانی

شام اور قندوز کے مدرسوں کے طلباء پر بمباری کھلی دہشتگردی ہے :اکرم خان درانی

کاٹلنگ(نمائندہ پاکستان)داڑھی اور دستار پختون کا نشان ہے اور امن کا ثبوت ہے کسی کو جارحیت کی اجازت نہیں دینگے۔ مغرب ممالک ہماری کلچر سے نفرت کرتے ہیں۔ اسلام اخوت بھائی چارے کا درس دیتا ہے۔ امریکہ کا وحشیانہ کرتوت سامنے آکر شام اور قندوز کے مدرسوں کے طلباء پر بمباری کھلم کھلا دھشت گردی کا ثبوت ہے۔ پاکستان میں انکے حواریوں جماعتوں نے ایک لفظ نہیں بولا۔یہ انکی بی ٹیم ہے۔ انکے نقش قدم پر چل رہے ہیں۔ لیکن جمیعت علماء اسلام نے 2002کا ایم ایم اے دوبارہ بحال کرکے وفاق میں اسمبلی پر کلمہ طیبہ کا جھنڈا لہرائیں گے۔ پاکستان کی سرزمین پر کسی کو قتل غارت فحاشی عریانی کی اجازت نہیں دینگے۔ ان حیالات کا اظہار وفاقی وزیر اکرم خان درانی ، سینیٹر مولانہ عطا ء الرحمن ، سابقہ ایم این اے مولانہ محمد قاسم، سابق صوبائی وزیر حافظ اختر علی، تا ج الامین جبل ، مولانہ امانت شاہ، ایم پی اے فضل غفور ، مفتی حماد اللہ نے بخشالی چراہ گاہ میں شمولیتی جلسے سے خطاب کے دوران کیا۔ انھوں نے کہا کہ دینی جماعتوں نے اسمبلیوں میں یہودیوں کے بلوں کا ڈٹ کر مقابلہ کیا۔ ہمارے ہوتے ہوئے اسلام مخالف بل پاس نہیں ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نہیں این جی او کا ٹولہ ہے اور اسکا مشن پورا کر رہی ہے۔ انھوں پختون کی دستار اور خواتین کی چادر کی توہین کی ۔ ان کا بدلہ ووٹ کے زریعے لینگے۔ اس موقع پر شکیل اکبر نے اپنے ساتھیوں سمیت جمیعت علماء اسلام میں شمولیت اختیار کرلی۔

Back to

مزید : پشاورصفحہ آخر