صوبہ کے دیگر اضلاع کی طرح بونیر ضلع میں تمام کیڈرز کے اساتذہ سراپا احتجاج

صوبہ کے دیگر اضلاع کی طرح بونیر ضلع میں تمام کیڈرز کے اساتذہ سراپا احتجاج

بونیر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)صوبہ کے دیگر اضلاع کی طرح بونیر ضلع میں تمام کیڈرز کے اساتذہ سراپا احتجاج ،اساتذہ نے سینٹنئل ماڈل ہائی سکول سے بونیر پریس کلب تک احتجاج کیا ۔اپنے مطالبات کے حق اور حکومت کے خلاف زبردست نعرے بازی ۔مطالبات تسلیم نہ ہونے کی صورت میں 17 اپریل کو بنی گالہ جانے کا اعلان ۔پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے آل گرینڈ ٹیچرز الائنس جس میں ایپٹا کے صدر عمرسیاب ۔ایس او اے کے صدر نصرواللہ زیب ،افتحار جادید ،اورنگزیب عقاب ،راز محمد خان اور انعام اللہ نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت نے اساتذہ کے ساتھ جو ظلم روارکھاہے وہ برداشت سے باہر ہیں ۔اپنے مطالبات کا ذکرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ غیر مشروط ٹائم سکیل ،ریوائز سروس سٹرکچر ،پہلا چار درجاتی فارمولا اور ون سٹپ اپ گریڈیشن ہمارے جائیز مطالبات ہیں ۔انہیں فی الفور حل کیا جائے ورنہ پورے صوبہ میں سرکاری اساتذہ سکولوں کو تالے لگاکر بنی گالہ جائیں گے ۔اساتذہ مقررین نے کہا کہ حکومت کے وزراء اور مشیر کے مراعات اور تنحواہوں میں چار سوفیصد تک اضافے ہورہے ہیں ۔مگر معماران قوم اپنے مطالبات کے حق میں سڑکوں پر ہیں ۔انہوں نے کہا کہ سابق اے این پی کی حکومت نے اساتذہ کو جو مراعات اور سروس سٹرکچر دی تھی ۔موجودہ حکومت وہ واپس لے رہے ہیں ۔انہوں نے مانیٹرنگ سسٹم اور سکول بیسڈ پالیسی کو ظالمانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ حکومتی خزانے جس نے دونوں ہاتھوں سے لوٹا اس سے کوئی پوچھنے والا نہیں ۔مگر استاذ کو طرح طرح سے تنگ کیا جارہاہے ۔اساتذہ رہنماؤں نے کہا کہ نیا تعلیمی سال شروع ہوچکاہے ۔جبکہ اساتذہ کی اپنے مطالبات کے حق میں ہڑتال اورمظاہرے بچوں کی پڑھائی پر برے اثرات مرتب ہوں گے ،جسکی ذمہ داری حکمرانان وقت پر عائید ہوگی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...