سپریم کورٹ کا پنجاب فٹ بال ایسوسی ایشن کے انتخابات 14 روز میں کرانے کا حکم

سپریم کورٹ کا پنجاب فٹ بال ایسوسی ایشن کے انتخابات 14 روز میں کرانے کا حکم
سپریم کورٹ کا پنجاب فٹ بال ایسوسی ایشن کے انتخابات 14 روز میں کرانے کا حکم

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے14روزمیں پنجاب فٹ بال ایسوسی ایشن کے انتخابات کرانے کاحکم دے دیااور معاملے کو نمٹا دیا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے فٹ بال فیڈریشن انتخابات کیس کی سماعت کی، فیڈریشن کے صدر فیصل صالح حیات عدالت میں پیش ہوئے۔

عدالت نے پنجاب فٹ بال ایسوسی ایشن کے انتخابات 14 روز میں کرانے کا حکم دیتے ہوئے معاملہ نمٹا دیااورالیکشن رپورٹ چیمبر میں جمع کروانے کا حکم دے دیا

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہمارامقصدیہ ہے کہ کھیل کونقصان نہ ہو،یہ بتادیں ملک کو ترجیح دیں یا نہیں؟۔

جسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ہم چاہتے ہیں پاکستان کی عالمی سطح پرنمائندگی ہو،پاکستان کی ساخت کواہمیت دیں یاموجودہ انتظامیہ کے مسائل کو؟۔

جسٹس عظمت نے درخواست گزار سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی انانے پاکستان کوذلیل کرکے رکھ دیا۔

وکیل درخواستگزار نے کہا کہ فٹبال فیڈریشن پنجاب کے انتخابات کامعاملہ ہے،اس پر چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ سیاست کی وجہ سے کھیل کونقصان ہورہاہے،پہلے پنجاب اس کے بعدقومی سطح پرفٹبال فیڈریشن کاالیکشن ہوجائےگا۔

جسٹس شیخ عظمت نے استفسار کیا کہ کیاموجودہ انتظامیہ چاہتی ہے پاکستان کوالیفائرمیں شرکت نہ کرسکے؟،لگتاہے عدالت میں موجودلوگ نہیں چاہتے مسئلے کاحل ہو۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ علی رضاایڈووکیٹ پہلے مرحلے میں پنجاب کاالیکشن کرائیں گے،قومی سطح پرانتخابات بھی علی رضاایڈووکیٹ کرائیں گے۔

وکیل درخواستگزار نے کہا کہ عدالت نے کیاحکم دیا ہے مجھے بھی پتہ چلے،اس پر چیف جسٹس نے کہا کہ میں پابندنہیں آپ کوبتاو¿ں کہ میں نے کیاحکم دیا ہے۔

وکیل نے کہا کہ آپ کابہت زیادہ احترام کرتاہوں لیکن عدالت کواس طرح نہیں چلایاجاسکتا،چیف جسٹس ثاقب نے کہا کہ اپنی اناگھررکھ کرآیا کریں۔

وکیل درخواستگزار نے کہا کہ اس میں کوئی اناوالامعاملہ نہیں ہے۔

عدالت نے 14روزمیں پنجاب فٹ بال ایسوسی ایشن کے انتخابات کرانے کاحکم دیتے ہوئے معاملہ نمٹا دیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد