لو میرج کا رنج، لڑکی کے ورثاءنے دولہا اغوا کرلیا

لو میرج کا رنج، لڑکی کے ورثاءنے دولہا اغوا کرلیا
لو میرج کا رنج، لڑکی کے ورثاءنے دولہا اغوا کرلیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

پاکپتن (ویب ڈیسک) لو میرج کرنے پر لڑکی کے ورثاءنے دولہے کو قتل کرنے کی نیت سے اغواءکرلیا، زنجیروں میں جکڑ کر مویشیوں کے ساتھ باندھ کر تشدد اور طلاق دینے پر دباﺅڈالتے رہے، پولیس تھانہ قبولہ نے کارروائی کے دوران نوجوان کو بازیاب کروالیا۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

روزنامہ خبریں کے مطابق نواحی قصبے قبولہ کے علاقہ فرید شاہ کے رہائشی نوجوان محمد خان نے ڈھپئی کے علاقہ کی رہائشی خاتون امانت بی بی سے لو میرج کررکھی تھی جس پر امانت بی بی کے بھائی ذاکر نے اپنے 6 ساتھیوں کے ہمراہ محمد خان کے گھر سے محمد خان کو ہیلے بہانے سے اپنے ساتھ باہر لے جاکر اغواءکرلیا جس کے بعد ملزمان محمد خان کو تھانہ شبھور کے علاقے میں لے گئے جہاں محمد خان کو زنجیروں میں جکڑ کر مویشیوں کے ساتھ باندھ کر تشدد کا نشانہ بنایا اور طلاق دینے کا مطالبہ کیا، طلاق نہ دینے پر قتل کرنے کی دھمکیاں دیں جس پر محمد خاں کی والدہ منیراں بی بی نے تھانہ قبولہ میں اپنے بیٹے کے اغواءکا مقدمہ درج کروادیا۔

پولیس تھانہ قبولہ نے انویسٹی گیشن انچارج محمد وقاص کی سربراہی میں تھانہ شبھو رکے علاقہ میں چھاپہ مار کر نوجوان کو بازیاب کروالیا۔ پولیس ٹیم کے ریڈ پر ملزمان نے نوجوان کو مویشیوں کے ساتھ زنجیروں سے جکڑ کر باندھا ہوا تھا، پولیس نے مزید تفتیش شروع کردی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /پاکپتن