او پی ڈبلیو سی کے معائنہ کاروں کو دوما آنے کی اجازت دی جائے گی: روس

او پی ڈبلیو سی کے معائنہ کاروں کو دوما آنے کی اجازت دی جائے گی: روس
او پی ڈبلیو سی کے معائنہ کاروں کو دوما آنے کی اجازت دی جائے گی: روس

  

ماسکو(صباح نیوز)روس نے کہا ہے کہ کیمیائی ہتھیاروں کی روک تھام کی تنظیم او پی ڈبلیو سی کے معائنہ کاروں شامی شہر دوما میں مبینہ کیمیائی حملے کے مقام پر جانے کی اجازت دی جائے گی۔دوسری جانب روس نے مغربی ممالک کے ان الزامات کی تردید کی ہے کہ وہ اس مقام پر شواہد میں ردوبدل کر رہا ہے جہاں پر مبینہ کیمیائی حملہ ہوا تھا۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق کیمیائی ہتھیاروں کی روک تھام کی خود مختار تنظیم او پی ڈبلیو سی کا کہنا ہے کہ شامی حکومت نے اس سے قبل سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر اسے کیمیائی حملے کے مقام پر رسائی دینے سے انکار کیا تھاجبکہ گزشتہ روز روسی فوج نے اعلان کیا کہ بدھ کو بین الاقوامی معائنہ کاروں کو مبینہ کیمیائی حملے کے مقام پر جانے کی اجازت ہو گی۔او پی ڈبلیو سی کی 9 رکنی ٹیم پہلے سے ہی شامی دارالحکومت دمشق کے قریب اجازت ملنے کا انتظار کر رہی ہے۔

روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے شام میں مشتبہ کیمیائی حملے کے مقام پر شواہد سے چھیڑ چھاڑ کرنے کی تردید کی ہے۔واضح رہے کہ 7 اپریل کو ہونے والے کیمیائی حملے کے وقت دوما باغیوں کا مضبوط گڑھ تھا ،تاہم اب روسی اور شامی سیکیورٹی نے آپریشن کے بعد اس علاقے پر دوبارہ کنٹرول حاصل کر لیا ہے۔شام میں امدادی کارکنوں اور طبی اہلکاروں کے مطابق7 اپریل کو دوما میں ہونے والے کیمیائی حملے میں 40 سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی