ہائی کورٹ نے حکومت کوسکینڈری سکول کی کتابوں کی چھپائی کاٹھیکہ دینے سے روک دیا

ہائی کورٹ نے حکومت کوسکینڈری سکول کی کتابوں کی چھپائی کاٹھیکہ دینے سے روک دیا
ہائی کورٹ نے حکومت کوسکینڈری سکول کی کتابوں کی چھپائی کاٹھیکہ دینے سے روک دیا

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے سیکنڈری سکول کی کتابوں کی چھپائی کا ٹھیکہ من پسند افراد دینے اور کتابوں کو مہنگے داموں فروخت کے خلاف درخواست پر پنجاب حکومت اور پنجاب ٹیکس بک بورڈ کو سیشن 2018-19ءکے لئے تاحکم ثانی کتابوں کی پبلشنگ کا ٹھیکہ دینے سے روک دیا ۔

جسٹس امین الدین خان اورجسٹس عاطر محمود پرمشتمل دو رکنی بنچ نے مقامی وکیل شیراز ذکاءکی درخواست پرمدعا علیہان سے جواب بھی طلب کرلیا ہے۔درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ سیکنڈری سکول کی کتابوں کی چھپائی من پسند افراد کو دی گئی جس کی وجہ سے کتابیں مہنگے داموں فروخت کی جارہی ہے۔ درخواست گزار کے وکیل نے نکتہ اٹھایا کہ درسی کتب مہنگے داموں فروخت کرنا بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے اور طالب علم مہنگے داموں کتابیں نہیں خرید سکتے۔ درخواست گزار کے وکیل نے استدعا کی کہ سیکنڈری سکول کی کتابوں کو سستے نرخ پر فروخت کرنے کا حکم دیا جائے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور