جو مانگا دیا،57روز میں کچھ برآمد نہیں ہوا،مزید ریمانڈ نہ دیاجائے ،احد چیمہ کی عدالت سے استدعا،ملزموں کے جسمانی ریمانڈ میں 26اپریل تک توسیع

جو مانگا دیا،57روز میں کچھ برآمد نہیں ہوا،مزید ریمانڈ نہ دیاجائے ،احد چیمہ کی ...
جو مانگا دیا،57روز میں کچھ برآمد نہیں ہوا،مزید ریمانڈ نہ دیاجائے ،احد چیمہ کی عدالت سے استدعا،ملزموں کے جسمانی ریمانڈ میں 26اپریل تک توسیع

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے آشیانہ سیکنڈل کیس میں گرفتار سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد خان چیمہ، بسم اللہ کنسٹرکشن کمپنی کے چیف ایگزیکٹو شاہد شفیق سمیت چار دیگرملزمان کوجسمانی ریمانڈ پر مزید 26اپریل تک نیب کے حوالے کردیا ہے ۔

نیب نے آشیانہ سکینڈل کیس میں گرفتار احد خان چیمہ،شاہد شفیق، بلال قدوائی اور مختاراحمد کو مزید جسمانی ریمانڈ کے لئے گزشتہ روز احتساب عدالت میں پیش کیا،عدالت کو بتایا گیا کہ احد چیمہ کے خلاف غیر قانونی اثاثے بنانے کا ایک اور کیس بنایا گیا ہے، مزید ریمانڈ چاہیے ،ایک کروڑ 25لاکھ روپے کی رقم جو پیراگون سے حاصل کی گئی ہے ،اس کی تحقیقات جاری ہیں، دوران تفتیش پیرا گون کے چیف فنانس آفیسرعلی سجاد کی بے ضابطگیاں بھی سامنے آئی ہیں،شاہد شفیق تفتیش میں تعاون نہیں کررہا، ہے ،جب پوچھوکہتا ہے دباﺅ میں ہوں، بلال قدوائی اور امتیاز حیدر سے بھی تفتیش جاری اورمزید انکشافات سامنے آرہے ہیں، ملزمان کے وکلا ءکا کہنا ہے کہ ہر پیشی پرریمانڈ مانگا جاتا ہے ،نیب بند گلی میں کھڑی ہے ،احد چیمہ نے استدعا کی کہ 2 ماہ سے ریمانڈ پرہوں جو بھی مانگا میں نے دیا،اب کچھ نہیں ہے،میرے موبائل پر جس کا نمبر سامنے آتا ہے،بلا کر تفتیش شروع کردی جاتی ہے۔57روز میں کچھ برآمد نہیں ہوا،مزید ریمانڈ نہ دیا جائے،عدالت نے وکلاءکے دلائل سننے کے بعد ملزموں کو نیب کے حوالے کرتے ہوئے مزید سماعت آئندہ پیشی تک ملتوی کردی ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور /خیبرپختون خواہ