پشاور، دہشتگردوں کیخلاف آپریشن17گھنٹے بعد مکمل، 5 ہلاک مکان تباہ، شہید اہلکار کی نماز جنازہ ادا

پشاور، دہشتگردوں کیخلاف آپریشن17گھنٹے بعد مکمل، 5 ہلاک مکان تباہ، شہید ...

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی ) حیات آباد فیز7میں دہشت گردوں کیخلاف آپریشن میں ایک پولیس اہلکار شہید جبکہ5دہشتگرد ہلاک ہو گئے ،سکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان تقریباً 17 گھنٹے تک فائرنگ کا تبادلہ جاری رہا ۔تفصیلات کے مطابق پولیس نے حیات آباد کے ایک مکان میں دہشت گردوں کی موجودگی پر گزشتہ رات چھاپہ مارا تو اہلکاروں پر فائرنگ کی گئی جس کے بعد اضافی نفری طلب کی گئی۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے مطابق پاک فوج اور صوبائی پولیس نے پشاور کے علاقے حیات آباد میں خفیہ اطلاعات پر دہشتگردوں کی پناہ گاہ پر کارروائی کی، فائرنگ کے تبادلے میں اے ایس آئی قمر عالم شہید اور ایک جوان اور افسر زخمی ہوا۔آئی ایس پی آر کے مطابق کامیاب کارروائی کے نتیجے میں 5 دہشت گرد ہلاک ہوئے جن کی شناخت کا عمل جاری ہے۔ایڈیشنل آئی جی بم ڈسپوزل یونٹ شفقت ملک نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گھر میں 50 سے 60 کلو گرام بارودی مواد نصب کیا گیا تھا جسے ناکارہ بنانے کے دوران گھر میں زور دار دھماکا ہوا اور وہ منہدم ہوگیا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ جس گھر میں دہشت گرد موجود تھے وہ ایک ماہ قبل ہی کرایہ پر لیا گیا تھا جس کا مالک بیرون ملک ہے۔ کور کمانڈر پشاور لیفٹیننٹ جنرل شاہین مظہر محمود نے بھی آپریشن کی جگہ کا دورہ کیا اور جوانوں کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کی تعریف کی،وزیر اطلاعات خیبر پختونخوا شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ حیات آباد میں جج اور ایڈیشنل آئی جی پر حملے کی اطلاعات تھیں جسکے پیش نظر پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لیا۔ تفصیلات کے مطابق پشاور پولیس نے گزشتہ رات انٹیلی جنس اطلاعات کی بنیاد پر حیات آباد میں واقع 3منزلہ مکان میں دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی کی تھی، آپریشن کے دوران مکان میں موجود دہشتگردوں کی جانب سے شدید مزاحمت کی گئی۔ فائرنگ کے تبادلے میں ایک پولیس اہلکار شہید جبکہ 5دہشت گرد ہلاک ہو گئے ۔ دہشت گردوں کیخلاف اس آپریشن میں پولیس کو سکیورٹی فورسز کی مدد بھی حاصل تھی ۔گھر ایک ماہ قبل کرایہ پر لیا گیا تھا جس کا مالک مکان بیرون ملک ہے۔ علاقہ مکینوں نے آپریشن کیلئے مکمل تعاون کیا ۔شہید پولیس اہلکار قمر عالم کی نماز جنازہ ملک سعد پولیس لائنز میں ادا کر دی گئی جس میں وزیراعلیٰ محمود خان، کور کمانڈر پشاور شاہین مظہر محمود اور آئی جی محمد نعیم خان نے شرکت کی۔دوسری جانب وزیر اطلاعات خیبر پختونخوا شوکت یوسفزئی کے مطابق حیات آباد میں جج اور ایڈیشنل آئی جی پر حملے کی اطلاعات تھیں جس کے پیش نظر پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لیا۔شہید پولیس اہلکار سے متعلق شوکت یوسفزئی نے کہا کہ شہید پولیس اہلکار قمر عالم کا تعلق بڈھ بیر ماشخیل سے تھا۔

حیات آباد دھماکہ

مزید : صفحہ اول