قبائلی صحافیون کے مسائل کے حل کو ترجیح حاصل ہے: شوکت علی یوسفزئی

قبائلی صحافیون کے مسائل کے حل کو ترجیح حاصل ہے: شوکت علی یوسفزئی

باجوڑ ( نمائندہ پاکستان )ضم شدہ قبائلی اضلاع کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بعد یہاں کے صحافیوں کے غور طلب مسائل کے حل کیلئے کوشاں ہیں ۔ان خیالات کا اظہار وزیر اطلاعات خیبر پختونخوا نے قبائلی ضلع باجوڑ کے پہلے تاریخی دورے کے موقع پر جرگہ حال میں صحافیوں کے تقریب حلف برداری کے ایک پر وقار منعقدہ تقریب سے اپنے خطاب کیدوران کیا اُنہوں نے کہا کہ صحافیوں کا کردار معاشرے کے اصلاح اور عوامی مسائل کو اُجاگر کرنے کیلئے انتہائی اہمیت کا حامل ہیں یہاں تک کہ قبائلی صحافیوں نے امن و امان کی بحالی کے دوران اپنے جانوں کے نذرانے بھی پیش کی ہیں ۔ہماری حکومت صحافیوں کو درپیش مسائل کے حل کا ادراک رکھتی ہے ۔اس موقع پر صدر باجوڑ پریس کلب محمد سلیم نے اپنے خطاب میں شرکاء سے کہا کہ قبائلی صحافی روز اول سے گوناگوں مسائل کا شکار ہیں پریس کلب میں کمپیوٹر لیب ،سولر سسٹم اور جدید الیکٹرانک سہولیات کے عدم دستیابی اور عارضی باجوڑ پریس کلب کی بلڈنگ کے خستہ حالی سمیت بے شمار مسائل کے شکار ہیں اُنہوں نے مطالبہ کیا کہ باجوڑ میں جدید سہولیات سے آراستہ پریس کلب کے منظوری دینے کیساتھ ساتھ ان کو جدید آلات سے آراستہ کیا جائے ۔اس موقع پر شوکت یوسفزئی نے باجوڑ میں سرکاری ایف،ایم ریڈیو کے قیام ،ٹی، وی بوسٹر کھولنے سمیت صحافیوں کیلئے ایکری ڈیشن کارڈز کی منظوری دی اور کہا کہ قبائلی اضلاع کے صحافیوں کے ہر ممکن مدد کی جائیگی اس موقع پر دونو ں حلقوں کے ایم این ایز گل ظفر خان اور گلداد خان قبائلی زعماء باجوڑ یوتھ جرگہ اور یوتھ آف باجوڑ جرگہ کے آراکین ،ڈپٹی کمشنر عثمان محسود ،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر محمود احمد ،اے،سی خار حبیب اللہ وزیر ،سیاسی قائدین سمیت عام عوام نے کثیر تعداد میں شرکت کی ۔

مزید : صفحہ اول