ضم شدہ اضلاع میں ترقیاتی کا عمل مزید تیز کیا جائیگا : اجمل وزیر

ضم شدہ اضلاع میں ترقیاتی کا عمل مزید تیز کیا جائیگا : اجمل وزیر

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخواحکومت کے ترجمان اور وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے مشیر برائے ضم شدہ اضلاع اجمل وزیر نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان کے ویژن کے مطابق ضم شدہ اضلاع میں ترقی کا عمل ہر گزرتے دن کے ساتھ تیز تر کر دیا جائے گا تاکہ وہاں کے لوگوں کی محرومیوں اور پسماندگی کا جلد سے جلد ا زالہ کیا جا سکے اور علاقے کو ترقیاتی میدان میں ملک کے دوسرے حصوں کے برابر لائے جا سکے جس کے لیے صوبائی حکومت اور وزیراعلیٰ محمود خان کی سربراہی میں شب و روز کام کر رہے ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز اپنے دفتر میں ضم شدہ اضلاع سے آئے ہوئے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع کی صوبے کے ساتھ انضمام کاعمل بغیر کسی رکاوٹ کے جاری ہے۔خاصہ دار اور لیویز فورس کو صوبائی پولیس میں ضم کردیا گیا ہے جبکہ ضم شدہ اضلاع تک عدالتوں کی توسیع بھی کردی گئی ہے اگرچہ اس وقت بہت سے مشکلات درپیش ہیں لیکن صوبائی حکومت ایک جامع حکمت عملی کے تحت ان مشکلات کو حل کرنے پر کام کر رہی ہے گزشتہ روز وزیر اعلیٰ محمود خان کی طرف سے ضم شدہ اضلاع کے لئے انصاف روز گار سکیم کے اجراء کو ایک انقلابی قدم قرار دیتے ہوئے ترجمان نے کہا کہ اس سکیم کے اجراء سے ضم شدہ اضلاع کے نوجوانوں کو خود روزگاری کے ذیادہ سے ذیادہ مواقع میسر آئیں گے اور اسی طرح ان علاقوں میں بے روزگاری کا خاتمہ ہو جائے گا۔ اجمل وزیر نے وفد کو یقین دلایاکہ ایف سی آر کا کا لا قانون ختم ہونے کے بعد اب ضم شدہ اضلاع کے سرکاری افسران صحیح معنوں میں عوام کے خادم بن کر کام کریں گے اور لوگوں کے مسائل ان کی دہلیز پر حل کرنے کے لئے اقدامات کریں گے اگر عوام کو کسی بھی افسر کے بارے میں کو ئی شکایت ہو تو وہ وزیر اعظم یا وزیر اعلیٰ کے کمپلینٹ سیل میں شکایات درج کروائیں جس پر فوری طور پر کاررووئی کی جائے گی۔ انہوں نے وفد کو یہ بھی یقین دلایا کہ ضم شدہ اضلاع میں شروع کئے جانے والے تمام تر ترقیاتی کام وہاں کے لوگوں کی مشاورت سے شروع کئے جائیں گے تاکہ ان کا ذیادہ سے ذیادہ فائدہ عوام کو مل سکے۔ وفدنے ضم شدہ اضلاع کی ترقی کے لئے دن رات کا م کرنے پر اجمل وزیر کی کارکردگی کی تعریف کی اور انہیں سوونےئر پیش کر دیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر