گلیکسی رائس ویپرو پراجیکٹ کاشت کو فروغ دے گا، عمران شیخ

گلیکسی رائس ویپرو پراجیکٹ کاشت کو فروغ دے گا، عمران شیخ

لاہور (نیوز رپورٹر ) گلیکسی رائس WAPRO پراجیکٹ قدرتی وسائل کے دیرپا استعمال اور پانی کی بچت کے طریقوں ( لیزر لیولنگ ،بیج سے براہِ راست کاشت اور AWDٹیوب ) کو فروغ دے گا۔ اس امر کا اظہار پراجیکٹ ڈائریکٹر عمران شیخ نے گلیکسی رائس پرائیویٹ لمیٹڈ اور ویسٹ ملز فوڈز لندن اور ہیل ویتاس سوئس انٹر کوآپریشن کے اشتراک سے WAPROپراجیکٹ کے تحت دھان کے کاشتکاروں کے لئے دھان کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا۔کنونشن کا مقصد پانی کی بچت ،بہتر پیداوار اور منافع کا حصول تھا۔ گلیکسی رائس پرائیویٹ اپنے WAPRO"" پراجیکٹ کے تحت کسان بھائیوں کی رہنمائی کی کس طرح کسان کی نہ صرف فی ایکڑ پیداوار بڑھائی جا سکتی ہے بلکہ پانی کی بچت اور چاول کی کاشت پر ماحولیاتی تبدیلیوں کے برُے اثرات کو کم کیا جا سکتا ہے ۔ شاھد حسین تارڑ ڈائریکٹر گلیکسی رائس پرائیویٹ لمیٹڈنے دھان کنونشن میں آنے والے معزز مہمانوں اور کسانوں کو خوش آمدیدکہا انھوں نے بتایا کہ کپاس کے بعد چاول ملکی زرِمبادلہ کا دوسرا بڑا ذریعہ ہے ۔ہمارا ملک چاول کی پیداوا میں دوسرے ممالک سے کہیں پیچھے ہے۔

انھوں نے کسانوں کو بہتر کوالٹی کا چاول اُگانے کے لئے زرعی ماہرین کے مشوروں پر عمل کرنے کی تلقین کی۔ ڈاکٹر ارجمند نظامی کنٹری ڈائریکٹر ہیل ویتاس سوئس انٹرکوآپریشن نے پاکستان میں پانی کی قلت،غربت کے خاتمے، عورتوں سے امتیازی سلوک اور کسانوں کو قدرتی وسائل کے مؤثر استعمال پر آگاہی فراہم کی اورکسانوں کی فلاح و بہبودکے لئے WAPROپراجیکٹ کے بارے میں کسانوں کو تفصیلاََ بتایا ۔ ڈاکٹر عبدالغفور ممبرپلانٹ سائنسز(پاکستان ایگریکلچر ریسرچ کونسلPARC)نے کسانوں کو صحتمند اور تصدیق شدہ بیج کی اہمیت کے بارے میں بتایا انھوں نے کہا کہ ذاتی بیج کے سالہا سال استعمال کی وجہ سے کوالٹی کا معیار اور پیداوار کم ہوجاتی ہے ۔

ڈاکٹر انجم علی بٹر ڈائریکٹر جنرل محکمہ زراعت(توسیع) پنجاب نےWAPROپراجیکٹ کے افتتاح کو کسانوں کی بہتری اور خوشحالی کی جانب اہم قدم قرار دیا جس کے لئے انھوں نے گلیکسی رائس اور ہیل ویتاس سوئس انٹرکوآپریشن کا شکریہ ادا کیا اور انھوں نے مزید کہا کہ WAPROپراجیکٹ قومی پالیسی برائے پانی 2018اور صوبائی زرعی پالیسی 2018 کے حصول میں مدد گار ثابت ہو گا اور مزید انھوں نے محکمہ زراعت (توسیع)پنجاب کی طرف سے WAPROپراجیکٹ میں بھر پور تعاون کا یقعین دلایا۔ راؤ محمد طارق سینئرمینجر فوجی فرٹیلائزر کمپنی نے خطاب کرتے ہوئے کھادوں کے متناسب استعمال پر زور دیا ۔اور بتایا کی اس سے نہ صرف پیداوا ر اور منافع میں اضافہ ہوتاہے بلکہ زمین کی ساخت بھی برقرار رہتی ہے انھوں نے SRPسٹینڈرڈ کی سفارشات کے مطابق کھادوں کے استعمال پر زور دیا ۔ ڈاکٹر محمد صابر ڈائریکٹر رائس ریسرچ انسٹیٹیوٹ کالا شاہ کاکونے دھان کی ریسرچ کے بارے میں جاری پراجیکٹس کے بارے میں بتایا ۔او ر WAPROپراجیکٹ کو کسانوں کے لئے خوش آئند قرار دیا۔ ڈاکٹر طاہر حسین اعوان رائس ریسرچ انسٹیٹیوٹ کالا شاہ کاکو نے دھان کی براہِ راست کاشت اور جڑی بوٹیوں مؤثر کنٹرول پر کسانوں کو تفصیلاََ رہنمائی فراہم کی۔ ڈاکٹر محمد افضل ڈائریکٹر کراپ لائف نے کسانوں سے دھان میں زرعی ادویات کے ذمہ دارانہ استعمال پر زور دیا اور بتایا کہ زرعی ادویات کے بروقت اور محفوظ استعمال سے پیداوار میں اضافہ ہو گا اور ماحول کے تحفظ کو بھی برقرار رکھا جا سکتاہے

عامر مانگٹ اسسٹنٹ ڈسٹرکٹ آن فارم واٹر مینجمنٹ نے WAPROپراجیکٹ کو کسانوں کے لئے بہت بڑی کاوش قرار دیا اور گلیکسی رائس کو خراجِ تحسین پیش کیا۔محمد طاہرریجنل ڈائریکٹرفیڈرل سیڈسرٹیفکیشن اینڈرجسٹریشن ڈیپارٹمنٹ نے معیاری اور تصدیق شدہ بیج کے متعلق راشنی ڈالی، اظہر حسین تار ڑ ڈائریکٹرآپریشنز ،میاں ساجد حسین تاڑر ،حاجی شوکت علی پراجیکٹ مینجرگلیکسی رائس نے کسانوں کی بھرپور شرکت پر شکریہ ادا کیا ۔دیکر شرکاء میں راجہ بنارس Sygenta پاکستان،ضیاء اللہ ملک Kanzo-AG،چوہدری اسماعیل فاطمہ فرٹیلائزر،شہزادالحق جعفر ایگرو سروسز ،عبدالحنان بائر کراپ سائنسز ،عرفان مغل گرین لینڈ ڈسکہ ،آفتاب نسیم ،عباس ضیاء FFCسعد چیمہ WWFپاکستان ،محبوب الہی نیسلے پاکستان، عاصم ثقلین آکسفیم پاکستان شامل تھے۔کسان طبقے کی طرف سے کیپٹن عرفان اجمل اور مصطفے خان نے WAPROپراجیکٹ کو کسانوں کی ترقی کے لئے اہم قدم قرار دیا ۔آخر میں مہمانِ خصوصی نے مندرجہ ذیل کمپنیوں کے سٹالز کا معائنہ کیا، رائس ریسرچ انسیٹیوٹ کالا شاہ کاکو ،فوجی فرٹیلائزر کمپنی ،کراپ لائف پاکستان،بائر کراپ سائنس ،کنیزو اے۔جی ، گرین لینڈڈسکہ اور بہاول انجینئرنگ کے سٹالز موجود تھے۔

مزید : کامرس