صرف 150دن پڑھائی ، یونیورسٹیز اساتذہ مفت کی روٹیاں توڑنے میں سب سے آگے ، ریسرچ ورک ٹھپ تعلیم کا بیڑا غرق

صرف 150دن پڑھائی ، یونیورسٹیز اساتذہ مفت کی روٹیاں توڑنے میں سب سے آگے ، ریسرچ ...

ملتان(سٹاف رپورٹر)سرکاری یونیورسٹیوں کے اساتذہ سال میں صرف 5ماہ پڑھاتے ہیں جبکہ سا ت ماہ مفت تنخواہ لیتے ہیں۔ تفصیل کے مطابق سرکاری یونیورسٹیوں کے اساتذہ دیگر سرکاری ملازمین کے مقابلے میں سال بھر نوکری کرنے کی بجائے صرف پانچ مہینے پندرہ دن ملازمت کرتے ہیں۔ سال کے 365 دنوں میں سے یونیورسٹیاں 191 دن بند رہتی ہیں جبکہ یونیورسٹیاں تدریس کیلئے صرف 5 مہینے کھلی رہتی ہیں، موسم گرما کی 77 چھٹیاں،(بقیہ نمبر56صفحہ12پر )

موسم سرما میں دس چھٹیاں ہوتی ہیں، ہفتے کے روز کی چھٹیوں کی تعداد 47 بنتی ہے اور ہر سمسٹر کے فائنل ٹرم امتحان کے بعد ایک ہفتے کی چھٹیاں کر دی جاتی ہیں۔ان میں اْستاد کی 25 استحقاقی چھٹیاں ملا کر سال میں 216 چھٹیاں بنتی ہیں، سال میں 191 روز چھٹیاں ہونے پر یونیورسٹیوں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے، سرکاری محکموں میں اساتذہ کا طبقہ سب سے کم کام کرنیوالا ہے۔ اس بارے میں ماہرین تعلیم کا کہنا ہے کہ پاکستان کی یونیورسٹیوں کو عالمی سطح پر لانے کیلئے اساتذہ کی چھٹیوں کو کم کیا جائے اور ریسرچ ورک کو فروغ دیا جائے۔

150 دن پڑھائی

مزید : ملتان صفحہ آخر