سندھ کے مالی حقوق دبا کر غلط روایات کی بنیاد ڈالی جا رہی ہے،مولانافضل الرحمن

سندھ کے مالی حقوق دبا کر غلط روایات کی بنیاد ڈالی جا رہی ہے،مولانافضل الرحمن

درگئی( صباح نیوز) متحدہ مجلس عمل اور جمعیت علماء اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے جے یو آئی 18ویں ترمیم کے خاتمے کے خلاف پارلیمنٹ کے اندر اور باہر دونوں فرنٹس پر بھر پور مخالفت کرے گی ۔ وفاق اور تمام صوبوں کو ایک نگاہ سے(بقیہ نمبر48صفحہ12پر )

دیکھنا چاہئے سندھ کو مالی حقوق نہ دے کر غلط روایت کی بنیاد ڈالی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جے یو آئی ملک میں نئے اور شفاف انتخابات کے مطالبے پر قائم ہے اور موجودہ صورتحال سے نکلنے کا واحد ذریعہ مسلط کی گئی نا اہل حکومت سے نجات ہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جے یو آئی صوبہ خیبر پختون خوا کے صوبائی معاون انتخابات مولانا سلمان تاثیر کی سربراہی میں جے یو آئی مالاکنڈ کے ایک نمائندہ وفد کے ساتھ اپنی رہائش گاہ پر ملاقات کے دوران کیا۔ مولانا فضل الرحمان نے جے یو آئی کے وفد میں شامل علماء کرام پر زور دیا کہ وہ اپنی دستوری ذمہ داریاں احسن طریقہ سے نبھائیں اور جے یو آئی کو مزید فعال اور مضبوط بنانے کیلئے تنظیمی امور میں نظم و ضبط پر عمل کریں ۔ موجودہ نا اہل حکومت ایک بار پھر مشرف دور کی روایات کو تازہ کرکے دینی مدارس کے خلاف سرگرم عمل ہوگئی ہے لیکن دینی مدارس کے خلاف کسی بھی قسم کی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔

غلط روایات

مزید : ملتان صفحہ آخر