1896 بھارتی سکھ یاتریوں کی حسن ابدال سے ننکانہ آمد، پرتپاک استقبال

1896 بھارتی سکھ یاتریوں کی حسن ابدال سے ننکانہ آمد، پرتپاک استقبال

ننکانہ صاحب (نمائندہ خصوصی)بیساکھی میلہ میں شرکت کے لیے پاکستان آئے ہو ئے 1896 بھارتی سکھ یاتری سردار رویندر سنگھ کی قیادت میں تین سپیشل ٹرینوں کے ذریعے حسن ابدال سے ننکانہ صاحب پہنچ گئے ، ریلوے اسٹیشن پرضلعی انتظامیہ اور متروکہ وقف املاک بورڈ کی طرف سے سکھ یاتریوں کا پرتپاک استقبال کیا گیا تفصیلات کے مطابق بیساکھی میلہ میں شرکت کے لیے پاکستان آئے ہو ئے 1896 بھارتی سکھ یاتری گورودواہ پنجہ صاحب حسن ابدال میں بیساکھی کی تقریبات کے اختتام کے بعد تین سپیشل ٹرینوں کے ذریعے ننکانہ صاحب پہنچ گئے سکھ یاتری جب ریلوے اسٹیشن ننکانہ صاحب پہنچے ، توضلعی انتظامیہ کی طرف سے سکھ یاتریوں کا پرتپاک استقبال کیا گی ڈپٹی کمشنر راجہ منصورا حمد ، ایس پی خالدہ پروین ، آر ٹی اے سیکرٹری عطیہ قمر قریشی ، اے ایس پی ارسلان شاہزیب ، چیئرمین بلدیہ چوہدری نعیم احمد ، چیف آفیسر بلدیہ میاں فیاض احمد ، صدر پریس کلب ننکانہ صاحب ،ضلعی افسران اور عمائدین شہر نے سکھ یاتریوں پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کیں اور انہیں پھولوں کے ہار پہنائے سکھ یاتریوں نے ٹرین سے اترتے ہیں اپنے مذہبی نعرے لگائے ریلوے اسٹیشن کی فضا "جو بولے سو نہال " 'ست سری اکال" اور " واہے گورو جی خالصہ " " واہے گورو جی کی فتح " کے فلک شگاف نعروں سے گونج اٹھی ، سکھ یاتریوں کو خصوصی بسوں کے ذریعے سیکیورٹی کے کڑے حصار میں گورودوارہ جنم استھان پہنچایا گیا جہاں سکھ یاتریوں نے اکھنڈ پاٹھ کی رسم سے تین روزہ تقریبات کا آغاز کر دیا ضلعی انتظامیہ نے سکھ یاتریوں کی سیکیورٹی کے لیے ریلوے اسٹیشن اور گورودوارہ جنم استھان کی سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کیے ہیں ۔مزید براں بیساکھی میلہ کی تقریبات میں شرکت کے لیے پاکستان آئے ہوئے بھارتی سکھ یاتری گورودوارہ جنم استھان میں اکھنڈ پاٹھ ، متھا ٹیکی، شبد کیرتن اور اشنان کی رسومات ادا کر نے میں مصروف ہیں ، گورودوارہ جنم استھان کے احاطہ میں سکھ یاتریوں نے کرتار پور راہدری کھولنے اور بہترین انتظامات کرنے پر عمران خان زندہ باد کے نعرے لگائے۔ تفصیلات کے مطابق تقریبات میں اندورن ملک سمیت بھارت اور دیگر ممالک سے آئے ہوئے1896سکھ یاتری تین روزہ تقریبا ت بڑے جوش و خروش سے منا رہے ہیں حکومت پاکستان کی طرف سے سکھ یاتریوں کے قیام و طعام کے بہترین انتظامات کیے گئے ہیں اور سکھ یاتریوں کے لیے تمام تر سہولیات فراہم کی گئی ہیں جبکہ سکھ یاتریوں کی سیکیورٹی کو بھی فول پروف بنایا گیا ہے سکھ یاتریوں کو گورودواہ جنم استھان میں واک تھرو گیٹ سے گزارا جارہا ہے اور انکے ساما ن کو سکرینگ مشین سے چیک کیا جارہا ہے جبکہ گوردوارہ جنم استھان کی سی سی ٹی وی کیمروں سے نگرانی کی جارہی ہے تقریبات کے موقع پر شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر پولیس اہلکار تعینات کیے گئے ہیں سکھ یاتریوں کی سیکیورٹی کے لیے13سو سے زائد پولیس اہلکار اپنی ڈیوٹی سر انجام دے رہے ہیں سکھ یاتری اپنے قیام و طعام اور سیکیورٹی کے بہترین انتظامات کرنے پر حکومت پاکستان کا شکریہ اداکیا۔

پرتپاک استقبال

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر