اسسٹنٹ کمشنر کبیروالا کا ٹول پلازہ ملازم پر تشدد کی ویڈیو وائر ل

    اسسٹنٹ کمشنر کبیروالا کا ٹول پلازہ ملازم پر تشدد کی ویڈیو وائر ل

  

کبیروالا(تحصیل رپورٹر) اسسٹنٹ کمشنر کبیروالا حافظ مدثر نواز نے اپنے سرکاری ڈرائیور اظہر حسین کی مدعیت میں پولیس تھانہ حویلی کورنگا میں 13اپریل2020کو ٹول پلازہ درکھانہ موٹر وے ایم فور تحصیل کبیروالا کے 8ملازمین محمدلائق،جاویدارائیں،(بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

نیازحسین،محمود علی،مغیرہ،محمد ادریس،شاہ میر،شاہد پہوڑاور 7نامعلوم کے خلاف بجرم 341،353،186،382،506B،109،148،149درج کرائی گئی ایف آئی آر نمبری 144/2020میں موقف اختیار کیا تھا کہ سرکاری گاڑی کے سرکاری ڈرائیوراظہر حسین نے ٹول پلازہ کے درج بالا ملازمین کو اسسٹنٹ کمشنر کبیروالا حافظ مدثر نواز کاتعارف کروایا،لیکن انہوں نے بدتمیزی کا مظاہرہ کرتے ہوئے نہ صرف اسسٹنٹ کمشنر کبیروالاکے ساتھ ہتک آمیزرویہ اپنایا بلکہ مدعی درخواست پر بھی تشدد کیا۔واقعہ کے بعد پولیس تھانہ حویلی کورنگا نے نامزد ملزمان کو گرفتار کرکے متعلقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا،جس پر عدالت نے وکلاء کی جانب سے پیش کردہ دلائل کی روشنی میں تمام گرفتار ملازمین کی ضمانت منظور کرتے ہوئے رہائی کا حکم دیا۔گزشتہ روزسوشل میڈیا پر ٹول پلازہ درکھانہ کے سی سی ٹی وی کیمروں سے حاصل کردہ ویڈیوز میں اسسٹنٹ کمشنر کبیروالا حافظ مدثر نواز کوٹول پلازہ درکھانہ کے ملازم پر تھپڑوں کی بارش کرتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔دستیاب ذرائع کے مطابق اسسٹنٹ کمشنرکبیروالاحافظ مدثر نواز نے ٹول پلازہ کے ملازمین کی جانب سے ٹول پلازہ فیس مانگنے پر طیش میں آکر ڈیوٹی پر موجود ملازم پر تشدد کیا تھا۔سوشل میڈیا پر مذکورہ ویڈیو وائرل ہونے کے بعد ڈرائیور کی مدعیت میں ٹول پلازہ درکھانہ کے ملازمین پر درج کرائی گئی ایف آئی آر جھوٹ کا پلندہ ثابت ہوئی۔کبیروالاکے عوامی،سماجی حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب،کمشنر ملتان،ڈپٹی کمشنر خانیوال سے اسسٹنٹ کمشنرکبیروالا کے خلاف محکمانہ کارروائی عمل میں لانے کا مطالبہ کیا ہے۔

اسسٹنٹ کمشنر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -