کورونا وائرس،مودی کی مسلمان دشمنی سامنے آگئی،ایسا اقدام کے ہر باشعور شخص کو غصہ آجائے

کورونا وائرس،مودی کی مسلمان دشمنی سامنے آگئی،ایسا اقدام کے ہر باشعور شخص ...
کورونا وائرس،مودی کی مسلمان دشمنی سامنے آگئی،ایسا اقدام کے ہر باشعور شخص کو غصہ آجائے

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) کورونا وائرس دنیا بھرمیں بلاتفریق لوگوں کی قیمتی جانیں نگل رہا ہے مگر بھارت میں مودی سرکار نے اس موذی وبا کے دوران بھی مسلمان دشمنی برقرار رکھی ہوئی ہے۔ بھارت میں کورونا وائرس سے متاثرہ مسلمان مریضوں کو نہ صرف ہندو مریضوں سے الگ رکھا جارہا ہے بلکہ ان کے ہاتھوں پر مخصوص مہریں بھی لگائی جا رہی ہیں تاکہ ان کی شناخت نمایاں کی جاسکے۔

برطانوی خبرایجنسی رائٹرز کی ایک رپورٹ کے مطابق  ممبئی کے چھیاسٹھ سالہ اقبال حسین صدیقی بھی مودی سرکار کی مسلمان دشمنی کا شکار ہونے والوں مٰیں شامل ہیں جنہیں ہیلتھ ورکرز نے ہاتھوں پر مہر لگاکر گھر کے ایک ایسے کمرےمٰیں بند رہنے کا کہا ہے ۔ کورونا وائرس سے متاثرہ اقبال حسین انڈے بیچ کر اپنا گزارا کرتے ہیں اور وسائل نہ ہونے کی وجہ سے کسی مناسب جگہ سے علاج کی سکت نہیں رکھتے۔

اقبال حسین کے بقول انہیں ایک ایسے کمرےمیں رکھاگیا ہے جہاں وینٹی لیٹر تک نہیں ہے۔ اور اسی طرح تمام مسلمان مریضوں کو جان بوجھ کر طبی سہولیات سے عاری جگہوں پر رکھا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مودی حکومت کووڈ 19کی آڑ میں مسلمانوں کا ڈیٹا جمع کررہی ہے اور یہ ڈیٹا مسلمانوں کو دوسرے درجے کا شہری بنانے کیلئے استعمال کیاجارہاہے ۔ رائٹرز کے مطابق اس نے ایک درجن سے زیادہ مسلم کمیونٹی سے وابستہ افراد سے بات کی ہے او ر ان سب نے مودی سرکارکے تعصب کی تصدیق کی ہے۔

خیال رہے بھارت میں کورونا وائرس کی وجہ سے اب تک 437افراد ہلاک ہو چکے ہیں.

یادرہےدنیا میں کورونا وائرس سے 21 لاکھ سے زیادہ متاثرین سامنے آچکے ہیں جبکہ اموات کی تعداد ایک لاکھ 40 ہزار سے زیادہ ہے۔

امریکہ میں سب سے زیادہ کم از کم چھ لاکھ 40 ہزار متاثرین کی تصدیق ہو چکی ہے جبکہ وہاں ہلاکتوں کی تعداد 30500 سے زیادہ ہے۔

امریکہ میں مارچ کے وسط سے اب تک 2 کروڑ 10 لاکھ سے زیادہ افراد بیروزگار ہوچکے ہیں

برطانیہ میں تین ہفتوں جبکہ ریاست نیویارک میں لاک ڈاؤن 15 مئی تک بڑھا دیا گیا ہے۔

مزید :

کورونا وائرس -