جیل میں قید سعودی عرب کے شاہی خاندان کی اہم ترین شہزادی نے محمد بن سلمان سے بڑی درخواست کردی

جیل میں قید سعودی عرب کے شاہی خاندان کی اہم ترین شہزادی نے محمد بن سلمان سے ...
جیل میں قید سعودی عرب کے شاہی خاندان کی اہم ترین شہزادی نے محمد بن سلمان سے بڑی درخواست کردی

  

ریاض(ڈیلی پاکستان آن لائن )سعودی عرب کے شاہی خاندان کی اہم ترین شہزادی 56 سالہ بسمہ بنت سعود گزشتہ سال مارچ میں اچانک لاپتہ ہوگئی تھیں اور بعد ازاں یورپی و امریکی میڈیا نے اپنی رپورٹس میں دعویٰ کیا تھا کہ انہیں ممکنہ طور پر سعودی حکومت نے نظر بند کرلیا ہوگا۔ایک سال تک لاپتہ اور خاموش رہنے کے بعد اب شہزادی بسمہ بنت سعود کی جانب سے سوشل میڈیا پر ایک پیغام جاری کیا گیا ہے، جس میں انہوں نے سعودی عرب کی حکومت سے مدد کی اپیل کی ہے۔

برطانوی اخبار دی گارجین کے مطابق پراسرار طور پر لاپتہ ہوجانے والی 56 سالہ شہزادی بسمہ بنت سعود نے اپنی ٹوئٹ میں سعودی عرب کے فرماں رواں اور ولی عہد سے مدد کی اپیل کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ قید میں رہنے کی وجہ سے ان کی طبیعت خراب ہوگئی ہے۔انہوں نے کہا کہ انہیں سعودی عرب کے الہیئر نامی جیل میں رکھا گیا ہے، جہاں ان کی صحت خراب ہو رہی ہے۔ اپنی ٹوئٹ میں انہوں نے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور فرماں روا شاہ سلمان سے اپیل کی کہ وہ ان کے معاملے کو دیکھیں اور اس پر نظرثانی کرکے انہیں باہر نکلنے اور علاج کی اجازت دیں۔سعودی شہزادی کی جانب سے ٹوئٹ کیے جانے کے کچھ ہی گھنٹوں بعد ٹوئٹ کو ڈیلیٹ کردیا گیا، تاہم اس حوالے سے تاحال سعودی حکومت نے کوئی جواب نہیں دیا۔

مزید :

عرب دنیا -