موضع کاہنہ میں پٹواری کی سیٹ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر اور پنجاب سروس ٹربیونل کے درمیان وجہ تنازعہ بن گئی

موضع کاہنہ میں پٹواری کی سیٹ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر اور پنجاب سروس ٹربیونل کے ...

لاہور(عامر بٹ سے) موضع کاہنہ میں پٹواری کی سیٹ انٹرنیشنل ڈسٹرکٹ کلیکٹر اور پنجاب سروس ٹربیونل کے درمیان وجہ تنازعہ بن گئی ایک پٹواری کو ہٹا کر اعلیٰ شخصیت کے من پسند پٹواری کو لگانے کا فیصلہ سروس ٹربیونل نے غیرقانونی قرار دیا لیکن ایڈیشنل کلکٹر نے اسے ماننے سے انکار کردیا اور بااثر پٹواری کو کام جاری رکھنے کی ہدایت کردی جس پر سروس ٹربیونل نے ایڈیشنل کلکٹر کی سخت سرزنش کی اور کمشنر لاہور کو حکم دیا کہ تبدیل کئے جانے والے پٹواری کو دوبارہ کاہنہ میں تعینات کیاجائے اور غیرقانونی اقدام کرنے والے ذمہ دارافسروں کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے ایڈیشنل کلکٹر کے دفتری عملہ نے مزید ہٹ دھرمی کی مثال قائم کرتے ہوئے سروس ٹربیونل میں جانے والے پٹواری کو معطل کردیا جس پر معطل شدہ پٹواری دوبارہ سروس ٹربیونل پہنچ گیا سروس ٹربیونل میں دی گئی درخواست میں محکمہ مال کے پٹواری امداد حسین نے مو¿قف اختیار کیا کہ وہ حلقہ کاہنہ میں بطور پٹواری تعینات تھا کہ ایک بااثر شخصیت کے حکم پر قبضہ بندوبست کے پٹواری منشی ذوالفقار علی کو وہاں تعینات کردیاگیا قانون کی رو سے بندوبستی پٹواری کو مال یا اشتمال میں پٹواری نہیں لگایاجاسکتادرخواست میں یہ بھی کہا گیا کہ ذوالفقار علی نے زبردستی مجھ سے چارج لیا اور غیرقانونی ہتھکنڈے استعمال کئے گئے جو کہ قانون کی سراسر خلاف ورزی کے زمرے میں آتے ہیں سروس ٹربیونل نے پٹواری کے وکیل آصف نذیر اعوان ایڈووکیٹ کے دلائل سننے کے بعد قرار دیا کہ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر کی طرف سے پٹواری امداد حسین کے تبادلے کے احکامات بادی النظر میں غیرقانونی معلوم ہوتے ہیں کیوں کہ پٹواری کو اس حوالے سے فوری فیصلہ کرنے کی ہدایت کی پٹواری امداد حسین پر عدالتی حکم لیکر ایڈیشنل کلکٹر کے آفس گیا تو ناصرف یہ کہ انہوں نے حکم ماننے سے انکار کردیا بلکہ پٹواری کے ہاتھ میں معطلی کا حکم نامہ بھی تھما دیا اور امداد حسین نے دوبارہ سروس ٹربیونل سے رجوع کیا جس پر جج نے حکم جاری کیا کہ پٹواری امداد حسین کی معطلی ناصرف غیرقانونی ہے بلکہ اس کے تبادلے کے حوالے سے سروس ٹربیونل کے فیصلے پر عمل درآمد نہ کرکے ایڈیشنل کلکٹر نے غیرقانونی کام کیا ہے اور کمشنر لاہور کی طرف سے کوئی فیصلہ آنے سے قبل ہی مزید غیرقانونی اقدام کردیاگیا ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1