سنگا پور ، ہانگ کانگ ، تائیوان اور جنوبی کوریا امیر ترین معیشتیں بن جائیںگی

سنگا پور ، ہانگ کانگ ، تائیوان اور جنوبی کوریا امیر ترین معیشتیں بن جائیںگی

 سنگاپور(اے پی پی) سنگا پور ، ہانگ کانگ ، تائیوان اور جنوبی کوریا 2050 تک فی کس آمدنی کے حساب سے دنیا کی امیر ترین معیشتیں بن جائیں گی۔ نائٹ فرینک اور سٹی پرائیویٹ بینک کے ایک وسیع سروے کے مطابق مشرقی ایشیاءکاخطہ انتہائی سرعت کے ساتھ معاشی ترقی کر رہا ہے اور معاشی ترقی کی رفتار یونہی برقرار رہی تو ایشیاء2050ءتک دولت کے لحاظ سے شمالی امریکہ اور مغربی یورپ کو پیچھے چھوڑ دے گا۔ سروے کے مطابق سنگا پور جو کہ فی کس آمدنی کے حساب سے ایشیاءمیں 2010ءمیں ٹاپ پر تھا 2050میں سب سے بڑی اقتصادی دولت مند قوت کے طور ابھر سکتا ہے۔ 2050تک سنگا پور کی فی کس آمدنی کی شرح 137.710امریکی ڈالر پر آجائے گی جبکہ ہانگ کانگ میں 116,639ڈالر ، تائیوان میں 114,093اور جنوبی کوریا میں 107,752 ڈالر تک پہنچ جائے گی۔ اس فہرست میں امریکہ پانچویں نمبر پر آ جائے گا جو 2010میں تیسرے نمبر پر تھا۔ سنگا پور کی فی کس جی ڈی پی آمدنی 2010میں 56,532ڈالر جبکہ ہانگ کانگ کی 45,301ڈالر تھی۔ جنوبی کوریا اور تائیوان 2010ءکی فہرست میں اولین 10ممالک میں شامل نہ تھے ۔ نائٹ فرینک کے مطابق ایشیاءمیں اس وقت 18ہزار ارب پتی ہیں جن کے اثاثے 100ملین یا اس سے زائد ہیں۔ شمالی امریکہ میں 17ہزار اور مغربی یورپ میں 14ہزار ارب پتی ہیں۔ جنوب مشرقی ایشیاءمیں 2016ءتک ارب پتیوں کی تعداد 26ہزار سے بڑھ جائے گی تاہم 2016ءمیں امریکہ 17ہزار 100ارب پتییوں کی وجہ سے ٹاپ لسٹ پر ہوگا

مزید : کامرس