واک ان انٹرویو کے تحت بھرتی ڈاکٹر زفارغ نہ کرنے پر ینگ ڈاکٹروں کا ایم ایس سروسز ہسپتال کے دفتر پر دھاوا

واک ان انٹرویو کے تحت بھرتی ڈاکٹر زفارغ نہ کرنے پر ینگ ڈاکٹروں کا ایم ایس ...

لاہور (جاوید اقبال) ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پنجاب نے اپنی احتجاجی تحریک کے نئے مرحلے میں داخل ہوکر سروسز ہسپتال کی میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹرریحانہ ملک کے دفتر پر دھاوا بول دیا۔ 40 سے زائد ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پنجاب کے صدر ڈاکٹر حامد بٹ سروسز ہسپتال کے صدر ڈاکٹر بشارت مرکزی ترجمان ڈاکٹرناصر بخاری پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے صدر عامر بندیشہ بھی شامل تھے۔ میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کے دفتر کے اندر داخل ہوگئے۔ ذرائع نے بتایا کہ ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے لیڈروں نے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کو ہراساں کیا اور ایسے ایسے الفاظ سے نواز ا گیا جو قابل تحریر نہیں لائے جاسکتے۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کو پیغام بھجوایا کہ وہ ہسپتال کے اندر حکومت کی طرف سے ڈاکٹروں کی ہڑتال کے دوران ” واک ان“ انٹرویو کے ذریعے بھرتی کیے گئے 50 ڈاکٹروں کو فی الفور ملازمت سے فارغ کریں ورنہ ان کے دفتر کا گھیراﺅ کیا جائے گا۔ ذرائع نے بتایا کہ ایم ایس نے کہا کہ حکومت پنجاب اور وزیر اعلیٰ کی ہدایت پر محکمہ صحت نے میو ہسپتال میں ایک پالیسی کے تحت 50/50 واک ان انٹرویو کے ذریعے بھرتی کیے ہیں۔ آپ محکمہ صحت سے رابطہ کریں نیا حکم نامہ لے آئیں۔اندر خانے میںغیر قانونی کام نہیں کرسکتی جس پر ڈاکٹروں نے کہا آ پ کو ایسا کرنا ہوگا۔ ان واک تھرو انٹرویو کے تحت بھرتی کیے گئے ڈاکٹروں کو فارغ کرکے ان کی جگہ اعزازی طور پر رکھے گئے50 ہاﺅس آفیسرز کو پیڈ کریں جس کا ایم ایس نے انکار کیا تو ڈاکٹروں نے ان کے دفتر پر دھاوا بول دیا۔ ان کو گالیاں نکالیں۔ دفتر سے نکالنے کی کوشش کی مگر ایم ایس ڈٹی رہیں۔ انہوں نے ینگ ڈاکٹرز کی غیرقانونی بات ماننے سے انکار کر دیا۔ اس حوالے سے ایم ایس ڈاکٹر ریحانہ ملک سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ میں کیا بتاﺅں جو ہونا تھا ہوگیا ان سے پوچھیں جنہوں نے ایسا کیا ہے وہ میرے بچے ہیں میں ان کیلئے دعا گو ہوں۔ اس حوالے سے ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پنجاب کے صدر ڈاکٹر حامد بٹ نے کہا کہ صرف تحریکی ساتھی ان کے کمرے میں گئے تھے اپنا حق مانگنے ان کو کوئی غلط رنگ دے تو ہم کچھ نہیں کہہ سکتے ہم سے حکومت سروس سٹرکچر کے معاملہ پر زیادتی کر رہی ہے ہم کس سے فریاد کریں

مزید : میٹروپولیٹن 1