بزرگ کشمیری رہنماءسید علی گیلانی جمعتہ الوداع مسجد بیت المکرم بارہمولہ ا ورعید کی نماز درگاہ ِ حضرت بل میں ادا کریں گے

بزرگ کشمیری رہنماءسید علی گیلانی جمعتہ الوداع مسجد بیت المکرم بارہمولہ ا ...

سرینگر(آ ئی اےن پی ) حریت کانفرنس (گ)نے حکومت سے کہا ہے کہ وہ چیرمین سید علی گیلانی کے گھر سے فوراً پولیس پہرہ ہٹادے تاکہ وہ جمعتہ الوداع اور عید کی نمازیں ادا کرسکیں اور سال میں ایک بار آنے والے اہم دینی فریضے کی ادائیگی سے محروم نہ رہیں۔۔ گزشتہ روز حریت ترجمان ایاز اکبر نے ایک بیان میں کہا کہ سید علی گیلانی کو مسلسل گھر میں قید رکھنا اور نماز پڑھنے تک کی اجازت نہ دینا انسانی اور دینی حقوق دونوں کی سراسر خلاف ورزی ہے اور اس قسم کی پابندیاں اب برداشت سے باہر ہورہی ہے،ایک فرد کو تقریباً پچھلے دو سال سے مسلسل اپنے گھر میں قید کرلیا گیا ہے اور اس حبس بے جا کے لئے نہ کوئی کورٹ آرڈر موجود ہے اور انتظامیہ کی طرف سے کوئی تحریری حکم نامہ اب تک قیدی کو دکھایا گیا ہے۔ حریت ترجمان نے اس بات پر حیرت اور افسوس کا اظہار کیا کہ اس صورتحال کے باجود پولیس کی طرف سے وقتاً فوقتاً اس قسم کے بیانات دلائے جاتے ہیں۔ حریت ترجمان نے چیرمین سید علی گیلانی کے جمعتہ الوداع کو بارہمولہ اور عید کو حضرت بل میں نماز پڑھنے کا اعلان کرتے ہوئے انتظامیہ کو خبردار کیا کہ وہ گیلانی کے گھر سے پوری طور پر پولیس نفری کو ہٹادے اور انہیں مقدس ایام کیلئے اآزاد چھوڑ دے۔ انہوں نے کہا ” حکومت کو ہوش کے ناخن لینے چاہیے اور اب کی بار بھی ا?زادی پسند راہنما کو نماز پڑھنے سے نہیں روکا جانا چاہیے“۔حریت بیان میں عوام سے اپیل کی گئی کہ وہ اپنے محبوب قائد کو سننے کے لئے جمعہ کے دن بارہمولہ اور عید کے دن حضرت بل جوق درجوق تشریف لائیں۔

مزید : عالمی منظر