اسلامی تعاون کی تنظیم نے طالبان کیساتھ امن مذاکرات کی حمایت کردی

اسلامی تعاون کی تنظیم نے طالبان کیساتھ امن مذاکرات کی حمایت کردی

واشنگٹن(اظہر زمان‘ بیورو چیف) اسلامی تعاون کی تنظیم کے مکہ میں ہونیوالے سربراہی اجلاس میں شریک تنظیم کے لئے امریکہ کے خصوصی مندوب ارشد حسین نے بتایا کہ کانفرنس نے طالبان کے ساتھ افغان امن مذاکرات کی پرزور حمایت کی ہے۔ یہاں وزارت خارجہ کے حکام نے اپنے خصوصی مندوب کی مکہ میں سرگرمیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ارشد حسین کی اس اجلاس میں شرکت دراصل امریکہ کے اسی عہد کا اظہار ہے کہ وہ بین الاقوامی برادری میں اپنے پارٹنر کے ساتھ مل کر شام کے عوام کی امنگوں کے مطابق ان کی مکمل حمایت کرتا ہے اور بشار الاسد کی حکومت پر دباﺅ میں اضافے کا خواہاں ہے۔ امریکی مندوب نے پہلے پاکستان کے صدر آصف زرداری اور تنظیم کے سیکرٹری جنرل کے علاوہ ملائشیا‘ ماریطانیہ اور سینیگال کے وزرائے اعظم اور نائیجیریا کے نائب صدر سے انفرادی ملاقاتیں کیں اور شاہ عبداللہ کی سحری کی دعوت میں ترکی صدر گل اور افغانستان کے صدر کرزئی سمیت دیگر رہنماﺅں سے ملے۔امریکی وزارت خارجہ کے حکام نے اپنے خصوصی مندوب کے حوالے سے میڈیا کو بتایا کہ اس کانفرنس کے پچاس سے زائد شرکاءنے پورے خطے اور خصوصاً افغانستان میں امن اور استحکام کے قیام کا عہد کیا۔ دریں اثنا ایک اطلاع کے مطابق طالبان کے ایک اہم رہنما ملا آغا جان معتصم نے ایک عشرے سے جاری افغان جنگ ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے لیکن طالبان کی قیادت نے اس بیان سے لاتعلقی ظاہر کی ہے اور آغا جان کو یہ بیان دینے پر تنظیم سے نکال دیا ہے۔

مزید : صفحہ اول