سُپریم کورٹ نے این آئی سی ایل کے مرکزی کردار محسن وڑائچ کی جلد گرفتاری کے احکامات جاری کردئیے

سُپریم کورٹ نے این آئی سی ایل کے مرکزی کردار محسن وڑائچ کی جلد گرفتاری کے ...

اسلام آباد (خبرنگار) سپریم کورٹ نے این آئی سی ایل کے مرکزی کردار محسن وڑائچ کی جلد گرفتاری کے احکامات جا ری کردیے ہیں جبکہ ایف آئی اے نے سپریم کورٹ کو بتایاہے کہ این آئی سی ایل اسکینڈل کیس میں ملزم محسن وڑائچ کو بلیک لسٹ کیا جاچکا ہے۔اسے اب دنیا کے کسی ملک سے پاسپورٹ کا اجرا نہیں ہوسکتا، عدالت نے پاسپورٹ منسوخ کئے بغیر بلیک لسٹ کئے جانے پر تنقید کی ہے۔چیف جسٹس افتخارمحمد چودھری کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے این آئی سی ایل کیس کی سماعت کی ۔ ایف آئی اے نے کیس میں پیشرفت سے متعلق رپورٹ پیش کی جس میں رقم کی ریکوری کیلئے اور ایاز نیازی کے تقرر کیخلاف کئے گئے اقدام کی تفصیلات شامل ہیں،جسٹس جواد خواجہ نے کہاکہ قوم کا اتنا پیسہ غبن ہوگیا، ایف آئی اے بیٹھی ہوئی ہے،کیا بااثرافراد ایف آئی اے کی دسترس سے باہر ہیں، ایف آئی اے کے ڈائریکٹر لیگل اعظم خان نے بتایاکہ کیس ملزم محسن وڑائچ کو بلیک لسٹ کردیا گیا ہے،اب وہ کسی ملک سے پاسپورٹ نہیں لے سکتا، جسٹس جواد خواجہ نے کہاکہ یہ عجب ہے کہ پرانا پاسپورٹ منسوخ نہیں کیا بلکہ بلیک لسٹ کردیا گیا، چیف جسٹس نے کہاکہ محسن وڑائچ کے خلاف کیا کارروائی ہوئی، اسکینڈل میں لوٹا گیا پیسہ قوم کا ہے، جیسے ہو ، اسے واپس لیکر آئیں۔

مزید : صفحہ اول