کامرہ حملے میں ہدف جے ایف 7 1طیارے تھے ، ترجمان طالبان

کامرہ حملے میں ہدف جے ایف 7 1طیارے تھے ، ترجمان طالبان

 اسلام آباد(آن لائن) تحریک طالبان پاکستان کے مرکزی ترجمان احسان اللہ احسان نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ان کے ساتھیوں کا ہدف جے ایف 17 کے طیارے تھے ، ہندوستان کے ساتھ تعاون کا سوچ بھی نہیں سکتے ، پاکستان کے بعد ان کا اگلا ہدف ہندوستان ہوگا ، کامرہ حملے میں ہلاک ہونے والے 9افراد پاکستانی ہیں کوئی غیر ملکی نہیں ، مزید کارروائیاں کرینگے ۔ نجی ٹی وی کے مطابق تحریک طالبان پاکستان کے مرکزی ترجمان احسان اللہ احسان نے جنوبی وزیرستان سے نجی ٹی وی کے ایک صحافی کو ٹیلی فون کرکے بتایا ہے کہ ان کے ساتھیوں کا ہدف کامرہ بیس میں موجود تین جے ایف 17 طیارے اور دیگر تنصیبات تھیں انہوں نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ ان کے ساتھی اپنے ہدف تک پہنچنے میں کامیاب ہوگئے تھے اور اس کارروائی میں ان کے 9 ساتھیوں نے حصہ لیا تھا جو تمام کے تمام اس کارروائی میں مارے گئے ہیں تاہم میڈیا سے ہمیں شکوہ ہے کہ میڈیا صحیح معلومات بیان نہیں کررہا ان کا دعویٰ ہے کہ سکیورٹی فورسز کی طرف سے بارہ افراد مارے گئے ہیں جب ان سے یہ سوال کیا گیا کہ آخر ایئر فورس کو کیوں نشانہ بنایا جاتا ہے وہ طیارے جو ہندوستان کی تنصیبات کیلئے خطرہ ہوسکتی ہیں وہی طالبان کے نشانے پر کیوں ہوتے ہیں جس پر ان کا کہنا تھا کہ وہ جو کچھ بھی کررہے ہیں وہ غزہ ہند کا حصہ ہیں اور پاکستان کے بعد اگلا ہدف ان کا ہندوستان ہی ہوگا اس لئے ہندوستان کے ساتھ تعاون کا وہ سوچ بھی نہیں سکتے ترجمان تحریک طالبان پاکستان کے ترجمان نے دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی مزید کارروائیاں بھی ہوسکتی ہیں حملے میں ہلاک ہونے والے تمام 9 افراد پاکستانی تھے ان میں کوئی غیر ملکی نہیں تھا ۔

مزید : صفحہ اول