انجینئرنگ یونیورسٹی کے 2 ارب 45 کروڑ 60 لاکھ مالیت کے بجٹ کی منظوری

انجینئرنگ یونیورسٹی کے 2 ارب 45 کروڑ 60 لاکھ مالیت کے بجٹ کی منظوری

ؒٓؒٓٓلاہور(نمائندہ خصوصی( گورنر پنجاب اور یو نیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے چانسلر سردار محمد لطیف خاں کھوسہ نے یوای ٹی کے سالانہ بجٹ ) ( 2011,12 2 ارب 45 کروڑ 60 لاکھ روپے کی منظوری دے دی۔ جمعرات کے روز یہاںیوای ٹی کے30 ویں سینٹ اجلاس سے اپنے صدارتی خطاب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان کا دفاع مضبوط ہاتھوں میں ہے۔ ملک کے تمام ادارے موجودہ جمہوری تسلسل کو جاری رکھنے پر متفق ہیں۔پاکستان ناکام ریاست نہیں ہے ایسے بیانات سے اجتناب کرنا چاہیے جس سے دہشت گردوں کو حوصلہ ملے ملکی سلامتی اور خود مختاری کے تحفظ کے لیے کسی بھی قسم کے آپریشن کا فیصلہ قومی مشاورت سے کیا جائے گا۔ انہوںنے کامرہ ائیر بیس پر دہشت گردوں کے حملے کی پرزور مذمت کی اور کہاکہ ہمارے مستعد جوانوں نے جوانمردی سے مقابلہ کرکے بڑے نقصان سے بچالیا تاہم اس واقعہ کی انکوائری کے بعدہی صحیح صورتحال واضح ہو سکے گی۔گورنر نے کہاکہ دہشت گرد اسلام اور پاکستان کے دشمن ہیں۔ ویسے تو رمضان میں شیطان بند ہوتا ہے مگر شومئی قسمت کہ ایسا ہو گیا۔ گورنر نے کہاکہ پارلیمنٹ اظہار خیال کا موثر فورم ہے ہمیں ادھر ادھر کی بجائے وہاں اپنا نقطہ نظر بیان کرنا چاہیے۔ ہماری حکومت شفاف انتخابات کی طرف گامزن ہے متفقہ الیکشن کمشنر کے بعد نگران حکومت بھی متفقہ ہی لائیں گے۔گورنر نے سینٹ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ترقی یافتہ اقوام کا مقابلہ کرنے کے لیے ہمیں سائنس وٹیکنالوجی کے میدان میں اپنی کارکردگی بہتر بنانا ہو گی۔ دنیا چاند سے بھی آگے نکل گئی ہے اور ہم تنگ نظریوں میں پڑے ہوئے ہیں۔ انہوں نے ورلڈ رینکنگ میں یوای ٹی کی 281 پوزیشن لینے پر مسرت کا اظہارکیا اور امید ظاہر کی کہ ملک کو انرجی بحران سے نکالنے کے لیے یوای ٹی اپنا حصہ ڈالے گی۔قبل ازیں وائس چانسلر لیفٹیننٹ جنرل (ر) محمد اکرم خاں نے یوای ٹی کی کارکردگی اور آئندہ کے منصوبوں پر تفصیلی بریفنگ دی۔ اجلاس میں سینئر ڈین ڈاکٹر زبیر اے خاں، ڈاکٹر عبد الستار شاکر، ڈاکٹر فضیلت طاہرہ، ڈاکٹر فیاض شاہ، ڈاکٹر احسان اللہ باجوہ، رجسٹرار، اراکین سینٹ کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔

مزید : صفحہ آخر