حکومت لائیوسٹاک سیکٹر میں نجی شعبے کی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرے: لاہور چیمبر

حکومت لائیوسٹاک سیکٹر میں نجی شعبے کی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرے: لاہور ...

لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر کے صدر شیخ محمد ارشد، سینئر نائب صدر الماس حیدر اور نائب صدر ناصر سعید نے حکومت پر زور دیا ہے کہ لائیوسٹاک سیکٹر میں نجی شعبے کی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرے کیونکہ یہ شعبہ معاشی استحکام کے حصول، روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے اور حکومتی محاصل بڑھانے میں اہم کردار ادا کرسکتاہے۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر کے صدر شیخ محمد ارشد، سینئر نائب صدر الماس حیدر اور نائب صدر ناصر سعید نے کہا کہ لائیوسٹاک سیکٹر کی کی ویلیو زرعی مصنوعات سے کہیں زیادہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ لائیوسٹاک سیکٹر کی جانب تھوڑی سی توجہ دیکر پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے ذریعے بہترین نتائج حاصل کیے جاسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مقامی اور ایکسپورٹ مارکیٹ میں پاکستانی گوشت کی بہت زیادہ مانگ ہے جس سے بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے اقدامات اٹھانا ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ زندہ جانوروں کی برآمد کے بجائے صرف گوشت کی برآمد پر توجہ دی جائے تاکہ زیادہ سے زیادہ فائدہ حاصل کیا جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ دودھ کی پیداوار کا پندرہ فیصد حصہ ٹرانسپورٹیشن کے دوران ضائع ہوجاتا ہے ، فارم ہاؤسز پر نفع و نقصان کے بغیر چلرز قائم کرکے اس ضیاع کو روکا جاسکتا ہے، حکومت کو چاہیے کہ ان چلرز کے قیام کے لیے پانچ سال کے لیے آسان شرائط پر قرضے دے۔

لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے کہا کہ خوراک کی مقامی ضروریات کا پچیس فیصد حصہ پولٹری میٹ سے پورا ہوتا ہے، اس صنعت کی پیداواری لاگت میں کمی لانے کے لیے ضروری ہے کہ پولٹری انڈسٹری میں استعمال ہونے والی درآمدی اشیاء پر ڈیوٹی کم سے کم کی جائے۔ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداروں نے کہا کہ دیہی علاقوں میں غربت کے خاتمے اور روزگار کی فراہمی میں لائیوسٹاک سیکٹر بہت اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔ انہوں نے تجویز پیش کی کہ دیہی علاقوں کی بیوہ خواتین کو پانچ بھینسیں، دس بکریاں اور تین ایکڑ زمین دی جائے جس سے وہاں لائیوسٹاک سیکٹر کے فروغ میں مدد ملے گی۔

مزید : کامرس


loading...