روس کی ایران سے شام میں فضائی کارروائی، طیارے ایرانی شہرہمدان کے فوجی اڈے منتقل کردیے ہیں:روسی وزارت دفاع

روس کی ایران سے شام میں فضائی کارروائی، طیارے ایرانی شہرہمدان کے فوجی اڈے ...
روس کی ایران سے شام میں فضائی کارروائی، طیارے ایرانی شہرہمدان کے فوجی اڈے منتقل کردیے ہیں:روسی وزارت دفاع

  


ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روسی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ شام میں باغیوں کے خلاف کاروائیوں کے دائرے کو وسعت دے دی،شام کے اڈے اسٹرٹیجک جہازوں کے لیے موزوں نہیں۔

عرب ٹی وی کے مطابق روسی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ روس کے اسٹرٹیجک اہمیت کے طیارے ایرانی شہرہمدان کے فوجی اڈے منتقل کردیے ہیں،طیاروں کی منتقلی کا مقصد حملے کے دوران طویل مسافت کم کرنا ہے،روس کی وزراتِ دفاع کا کہنا ہے کہ اس نے شامی شہروں حلب، ادلب اور دیر الزور عسکریت پسندوں کےاڈوں کو نشانہ بنانے کے لیے مغربی ایران کے فوجی اڈے کا استعمال کیا ہے،ایک بیان کے مطابق روس کے بمبار طیارے ٹپولیو 3M22 اور سخوئی لڑاکا طیاروں نے بدھ کے روز ایران کے ہمدان کے ہوائی اڈے سے پرواز بھری،بیان کے مطابق ان طیاروں نے حلب، ادلب، اور دیر الزور میں عسکریت پسندوں کو نشانہ بنایا۔یہ پہلی مرتبہ ہے کہ گذشتہ برس سے شام کے صدر کی حمایت میں جاری مہم کے دوران روس نے شام کے اندر حملوں کے لیے کسی تیسرے ملک کا استعمال کیا ہو۔ایران شامی صدر بشار الاسد کا بڑا حمایتی ہے اور سنہ 2011 سے شروع ہونے والے بغاوت کے بعد سے اسے بڑے پیمانے پر فوجی اور اقتصادی تعاون فراہم کرتا ہے۔

یمن کی سرحدی حدود سے سعودی عرب کے شہر میں میزائل حملہ ،سات افراد جاں بحق

گذشتہ ہفتے روس نے ایران اورعراق سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ روسی کروز میزائل کو اپنی فضائی حدود سے گزرنے کی اجازت دیں تاکہ وہ شام میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنا سکیں۔روس کی وزارتِ دفاع کے بیان کے مطابق بدھ کو کیے جانے والے فضائی حملوں میں ادلب اور حلب میں جہادیوں کی تربیت گاہوں کو نشانہ بنایا گیا جہاں شدت پسندوں کی بڑی تعداد ہلاک ہوئی اور اسلحے کے پانچ بڑے ذخیرے تباہ ہوئے۔

مزید : عرب دنیا


loading...