فنانس ایکٹ وزیر خزانہ پنجاب کی منظوری کا منتظر

فنانس ایکٹ وزیر خزانہ پنجاب کی منظوری کا منتظر

لاہور(عامر بٹ سے)رابطوں کا فقدان یا اختیارات کی جنگ ،وفاقی حکومت کی جانب سے یکم جولائی 2016سے فنانس ایکٹ میں کی جانے والی ترامیم صوبائی حکومت کے لئے ناقابل قبول ہو گئیں ، فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی جانب سے جاری کردہ ویلیو ایشن ٹیبل وزیر خزانہ پنجاب کی منظوری کا منتظر، موجودہ حالات میں موٹیشن فیس،کپٹل ویلیو ٹیکس اور سٹیمپ ڈیوٹی سٹیمپ ایکٹ 1899کی سیکشن Aکے تحت ڈسٹرکٹ کلکٹر ز کی جانب سے جاری کردہ ویلیو ایشن ٹیبل کے مطابق وصول کرنے کا فیصلہ ،وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے کسی فیصلہ پر نہ پہنچنے کی وجہ سے پراپرٹی کا کاروبار مزید بحران کا شکار ہو گیا ،گزشتہ ایک ماہ میں پنجاب حکومت کو اراضی کی خریدو فروخت پر لاگو ٹیکسز کی ریکوری نہ ہونے کی وجہ سے کروڑوں کا نقصان ہوا ،پنجاب کی رجسٹریشن برانچوں میں تعینات عملہ اور سائلین بھی تذبذب کا شکار ہو گئے ،مزید معلوم ہو ا ہے کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور ڈسٹرکٹ کلکٹرزکی جانب سے موٹیشن فیس،سٹیمپ ڈیوٹی فیس اور کیپٹل ویلیو ٹیکس کی وصولی کے لئے جاری کردہ ویلیو ایشن ٹیبل تاحال وزیر خزانہ پنجاب کی ٹیبل پر منظور ی کا منتظر ہے ،یکم جولائی 2016سے تاحال وفاقی اور صوبائی حکومتیں کسی حتمی نتیجے پر نہ پہنچ سکنے کی وجہ سے پراپرٹی کے کاروبار کے بحران میں حصہ دار بن چکی ہیں ،بورڈ آف ریونیو کی جانب سے 15اگست 2016کے سٹیمپ ونگ کی جانب سے جاری کردہ لیٹر کے مطابق 3026-2016/1354کے مطابق کیپٹل ویلیو ٹیکس،موٹیشن فیس اور سٹیمپ ڈیوٹی فیس کی وصولی کے لئے فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور ڈسٹرکٹ کلکٹر کی جانب سے جاری کردہ ویلیو ایشن ٹیبل وزیز خزانہ نے منظور نہ کیا ہے لہذا تاحال منظوری فنانس منسٹر پنجاب یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ موٹیشن فیس ،سی وی ٹی اور اسٹیمپ ڈیوٹی فیس 1899کے سیکشن Aکے تحت ڈسٹرکٹ کلکٹر زکی جانب سے جاری کردہ ویلیو ایشن ٹیبل کے مطابق وصولی کی جائیں گی ،ذرائع کے مطابق یہ اختیارات کی جنگ ہے ،فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور صوبائی حکومت جب تک کسی نتیجہ پر نہ پہنچے گی تب تک حکومتی خزانہ کو لگاتار کروڑوں روپے کا نقصان اور سائلین کو خواری کا سامنا کرنا پڑے گا ۔پچھلے 15دن میں 3لیٹر جاری ہو چکے ہیں اور لیٹر میں نئے احکامات کے تحت پراپرٹی پر لاگو ٹیکس اور فیسیں وصول کرنے کے احکامات ہیں ، پنجاب بھر کی رجسٹریشن برانچوں میں تعینات عملہ کے ساتھ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر جنرل اور ڈسٹرکٹ کلکٹرز بھی اگر مگر کی کیفیت میں مبتلاء ہو چکے ہیں ،موجودہ صورتحال میں گورنمنٹ کو شاید کوئی فرق نہ پڑے لیکن پراپرٹی کے کاروبار سے منسلک افراد شدید پریشانی میں مبتلاء ہیں ،پراپرٹی کا کاروبار اپنی تاریخ کے بدترین بحران کا شکارہو چکا ہے ۔ ترجمان کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی جانب سے ترمیم شدہ فنانس ایکٹ کے تحت جاری ویلیو ایشن ٹیبل کے لاگو ہونے کے لئے وزیر خزانہ پنجاب کی منظوری ضروری ہوتی ہے ،اس میں کوئی ابہام نہ ہے ، یہ ایک قانونی طریقہ جس کے مطابق کام کیا جارہا ہے ۔

مزید : علاقائی